تیل اور گیس کے ذخائر سے مالا مال سعودی عرب میں ایک منفرد سیاحتی مہم جوئی کا موقع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب جہاں آجکل ویژن 2030 کے تحت بے شمار منصوبے زیر عمل ہیں ۔ انہی میں ایک تیل کے ذخائر پر دلچسپ سیاحتی منصوبہ بھی شروع کیا جارہا ہے۔ شائقین اور سیاحوں کو سمندر سے دور تیل کے ذخائر کے علاقوں میں سیاحت کا موقع دیا جائے گا۔

یہ منصوبہ سعودی ویلتھ فنڈ کی مدد سے سیاحتی غرض سے تیار کیا گیا ہے۔ اس منصوبے کو' ریگ' کا نام دیا گیا ہے۔ یہ ڈمندر سے دور ایک پرلطف سیاحت کا مرکز بنے گا۔

یہ منصوبہ چالیس کلومیٹر پرمحیط ہے اور سعودی عرب کے مشرقی صوبے میں ایک ' آئل پارک' میں ڈیزائن کیا گیا ہے۔ آئل پارک ڈویلپمنٹ کمپنی اس کی پیش کار ہے۔ کمپنی نے بدھ کے روز اس کی افتتاحی تقریب کی۔ اوپی ڈی سی سعودی پبلک انویسٹمنٹ فنڈ سے لنے والی کمپنی ہے ۔

اس کا ڈیزائین کردہ تفریحی و سیاحتی منصوبہ جراید نامی جزیرے اور بیری آئل فیلڈ میں تین لاکھ مربع میٹر پر مشتمل ہے۔ اہک اندازے کے مطابق 2032 تک اسے 9 لاکھ سیاح وزٹ کریں گے۔

تین ہوٹل جن میں 800 کمرے سیاحوں کے ٹھہرنے کے لئے بنیں گے۔ اس تفریحی مرکز میں تفریح کے تمام امکانات ہوں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں