بھارت میں کمپنی کا ڈائریکٹراپنے سینکڑوں ملازمین کے سامنے 15 فٹ کی بلندی نیچے جا گرا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

بھارت میں ٹیکنالوجی کمپنی کا ایک ڈائریکٹرعمارت سے آہنی پنجرہ ٹوٹنے کے بعد پندرہ فٹ کی بلندی سے نیچے اپنے سیکڑوں ملازمین کے سامنے جا گرا۔ اس واقعے کی ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہی ہے جس میں حادثے کا منظر دکھایا گیا ہے۔

ایلی نوائے میں قائم ریونیو مینجمنٹ کمپنی ویسٹیکس کے ’سی ای او‘ سنجے شا اسٹیج پرآتے ہوئے گرگئے۔ یہ حادثہ اس وقت پیش آیا جب لوہے کے پنجرےکی تار ٹوٹ گئی اور اس میں موجود لوگ نیچے جا گرے۔

یہ عجیب واقعہ جمعرات کو ہندوستان کے شہر حیدر آباد کے راموجی فلم سٹی میں 'ویسٹکس ایشیا' فیسٹیول کی سلور جوبلی تقریب کے دوران پیش آیا۔

ایک چونکا دینے والی ویڈیو کلپ میں ہلاک ہونے والے شخص کو اپنے ساتھی راجو داتلا کے ساتھ دھاتی پنجرے کے اندر دکھایا گیا ہے۔ ایک آواز سامعین سے کہتی ہے کہ وہ اپنے ہاتھ ایک ساتھ رکھیں جب سٹیج سے آتش بازی پھٹتی ہے۔

لیکن اچانک کیبل ٹوٹ جاتی ہے اور ڈھانچہ گر جاتا ہے۔اس سے دونوں آدمی زمین پر گر جاتے ہیں۔ انہیں ہسپتال لے جایا جاتا ہے جہاں کمپنی کا ڈائریکٹر زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گیا۔

دی سن اخبار نے اطلاع دی ہے کہ دوسرے شخص کی حالت تشویشناک ہے۔

کمپنی کے ایک اہلکار نے ٹائمز آف انڈیا کو بتایا کہ "شا اور راجو کو پنجرے سے پلیٹ فارم تک نیچے لانا تقریبات شروع کرنے سے قبل پلان کا حصہ تھا۔ اچانک پنجرے سے جڑی دو تاروں میں سے ایک ٹوٹ گئی۔ وہ دونوں پندرہ فٹ کی اونچائی سے گرگئے اور کنکریٹ کے فرش پر جا گرے۔

پولیس نے بتایا کہ اس واقعے میں متعدد افراد زخمی ہوئے۔ پولیس نے مزید کہا کہ اس کے بعد ایونٹ مینجمنٹ حکام کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔

Vistex کی بنیاد مسٹر شا نے 1999 میں رکھی تھی اور آج اس کے 20 عالمی دفاتر اور 2,000 سے زیادہ ملازمین ہیں۔

56 سالہ شاہ اصل میں ممبئی کے رہنے والے تھے اور 17 سال کی عمر میں امریکہ چلے گئے تھے۔ انہوں نے 21 سال کی عمر میں پنسلوانیا کی Lehigh یونیورسٹی سے بزنس ایڈمنسٹریشن میں ماسٹر کی ڈگری حاصل کی۔

لواحقین میں ان کی ایک بیوی اور دو بیٹیاں ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں