نریندر مودی نے ایودھیا میں مسجد کی جگہ پر مزعومہ رام مندر کا افتتاح کر دیا

فوجی ہیلی کاپٹرز سے گل پاشی؛ آر ایس ایس کے سربراہ، امیتابھ، مادھوری اور رجنی کانت سمیت بالی وڈ کے متعدد اداکاروں کی افتتاحی تقریب میں شرکت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

بھارت کے وزیرِ اعظم نریندر مودی نے ایودھیا میں رام مندر کا باقاعدہ افتتاح کر دیا ہے۔ پیر کو رام مندر میں پرن پرتشتھا کے موقع پر آر ایس ایس کے سربراہ موہن بھگوت سمیت کئی اعلیٰ شخصیات موجود تھیں۔

ریاست اتر پردیش کے شہر ایودھیا میں قائم کیے گئے رام مندر کو ہندو عقیدت مند ’رام کی جنم بھومی‘ قرار دیتے ہیں۔ افتتاحی تقریب میں اتر پردیش کے وزیرِ اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ بھی موجود تھے۔

وزیرِ اعظم مودی نے افتتاح کے بعد تقریب میں شریک تمام افراد کا شکریہ ادا کیا۔ تقریب کے دوران فوج کے ہیلی کاپٹروں نے بھی گل پاشی کی۔

سیاسی رہنماؤں سمیت بالی وڈ کی کئی مشہور شخصیات مندر کی افتتاحی تقریب 'پرن پرتشتھا' میں شریک تھیں۔ پرن پرتشتھا وہ تقریب ہوتی ہے جس میں کسی مندر میں بھگوان کی مورتی کی رونمائی کی جاتی ہے۔

جنوری 22، 2024 کو ایودھیا میں ہندو دیوتا رام کے لیے وقف ایک مندر کے افتتاح کے دوران بالی ووڈ اداکار شامل ہوئے۔ (اے پی فوٹو/راجیش کمار سنگھ)

جس مقام پر 'رام للا' کی 51 انچ کی مورتی نصب کی گئی ہے اسے 'گربھ گرہ' یعنی رام کی جائے پیدائش کہا جاتا ہے۔

مندر ٹرسٹ کے مطابق اس کے لیے سونے کے دروازے نصب کیے گئے ہیں جب کہ گجرات سے منگوائی گئی 108 فٹ لمبی دھوپ کی چھڑی روشن کردی گئی ہے۔

افتتاحی تقریب میں شرکت کے لیے سات ہزار سے زائد مہمان مدعو کیا گیا تھا جن میں سیاست دان، سادھو سنت، صنعت کار، کھلاڑی، بالی وڈ شخصیات اور سرکاری اہلکار شامل تھے۔

بھارتی سپریم کورٹ کے پانچ رکنی بینچ نے نو نومبر 2019 کو متفقہ فیصلے میں اپنے خصوصی اختیارات کا استعمال کرتے ہوئے بابری مسجد کی اراضی کو رام مندر کے لیے دے دیا تھا جس کے بعد مندر کی تعمیر کا راستہ ہموار ہوا تھا۔

واضح رہے کہ 1992 میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) اور وشو ہندو پریشد (ای ایچ پی) نے بھارت بھر سے لوگوں کو ایودھیا میں جمع کیا جنہوں نے بابری مسجد کو مسمار کر دیا تھا جس کے بعد جہاں متعدد بار ہندو مسلم فسادات ہوئے۔ وہیں اس معاملے پر عدالتوں میں قانونی کارروائی بھی جاری تھی۔

رام مندر میں پیر کو ہونے والی پرن پرتشتھا کی تقریب سے قبل ہندو عقیدت مندوں نے شدید سردی میں اتر پردیش میں وارانسی میں دریائے گنگا میں اشنان کیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق وزیرِ اعظم نریندر مودی نے بھی اس تقریب میں شرکت سے قبل 11 دن تک سخت انوشاسن کیا ہے۔ اس دوران وہ زمین پر سوتے رہے ہیں جب کہ انہوں نے صرف ناریل کا پانی پیا ہے۔

وزیرِ اعظم مودی نے اس دوران ملک کے کئی مندروں کا دورہ کیا جب کہ تمل ناڈو کے قریب رامیشورم کے اگنی تریتھ کے ساحل پر خصوصی اشنان بھی کیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق تقریب میں بالی وڈ کے کئی فن کار شریک ہوئے جن میں امیتابھ بچن، ابھیشیک بچن، رنبیر کپور، عالیہ بھٹ، وکی کوشل، کترینا کیف، ایوشمان کھرانا سمیت دیگر شریک ہوئے۔

تقریب کی سکیورٹی کے لیے جہاں اسنائپر تعینات کیے گئے تھے۔ وہیں آرٹیفیشل ٹیکنالوجی سے لیس ڈرون سے نگرانی بھی کی گئی۔ سکیورٹی کے لیے دس ہزار کیمرے بھی نصب کیے گئے تھے۔

اپوزیشن جماعتوں کا بائیکاٹ

انڈیا کی سب سے بڑی اپوزیشن جماعت کانگریس نے بدھ کو ایک بیان جاری کیا جس میں رام مندر کے افتتاح کو حکمراں بھارتیہ جنتا پارٹی اور اس کی نظریاتی سرپرست تنظیم ’راشٹریہ سویم سیوک سنگھ‘ (آر ایس ایس) کا سیاسی منصوبہ قرار دے کر اس میں عدم شرکت کا اعلان کیا گیا۔

دوسری جانب انڈیا کے شہر ایودھیا میں بابری مسجد کی جگہ ہندو مندر کی تعمیر کے اعلان کے بعد سے ہی مسلمانوں میں اضطراب پایا جا رہا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں