امن کارکنوں کی امریکی رائے دہندگان سے احتجاجاً بیلٹ پر 'جنگ بندی' لکھنے کی اپیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

غزہ میں جنگ بندی کے حامی امن کارکنوں نے امریکی صدارتی انتخاب میں ووٹنگ کو بھی جنگ بندی مہم بنانے کی اپیل کر دی ہے۔

جنگ بندی اور امن کے حامیوں کی طرف سے اپیل میں کہا گیا ہے کہ ماہ نومبر کے صدارتی انتخاب کے موقع بیلٹ پیپرز پر ' سیز فائر' لکھ کر ووٹ ڈالے جائیں تاکہ صدر جو بائیڈن کی اسرائیل حماس جنگ کو ڈیل کرنے کی حکمت عملی کے خلاف احتجاج کیا جا سکے۔

جنگ مخالف مقامی اتحاد نے جنگ کےخلاف اس مہم کو' سیز فائر کے لئے ووٹ' کانام دیتے ہوئے کہا ہے 'اس کامقصد امریکیوں کو جنگ کے خلاف اپنی آواز بلند کرنے کا موقع دینا ہے۔تاکہ وہ صدر جو بائیڈن کی اسرائیل حماس جنگ سے متعلق پالیسی اور فلسطینی شہریوں کی غیر معمولی طور پر بڑھ جانے والی ہلاکتوں پر اپنے غم و غصے کا اظہار کر سکیں۔

ہیمپشائر کے علاقے میں ووٹرز منگل کے روز اپنے اپنے پسندیدہ امیدوارکی نامزدگی کے لئے کوشاں ہوں گے۔ منگل کا دن وائٹ ہاؤس تک پہنچنے میں اہم ہو گا۔

پچھلے تین ماہ سے جیسا کہ دنیا نے دیکھا ہے کہ غزہ میں جنگ بد ترین ہوتی گئی ہے۔ اس کے باوجود جو بائیڈن جنگ بندی سے انکار کر دیا۔ نیز اسرائیل کی حمایت کم کرنے سے بھی انکار کی ہے۔

جنگ مخالف مہم کے منتظمین کا کہناہے' ہم اپنی اس مہم کو اس جگہ پر لے جارہے ہیں جس کو ڈیموکریٹس بڑی توجہ اور اہمیت دیتے ہیں اور وہ صدارتی انتخاب ہے۔'

بظاہر صدر جو بائیڈن کی بطور امیدوار نامزدگی یقینی لگ رہی ہے۔ لیکن انہیں یہ ضرور پتا ہونا چاہیے کہ نامزدگی کے بعد کا راستہ مشکل اور لمبا ہو سکتا ہے اگر انہوں نے جنگ بندی کے حامیوں کی بات پر تو جہ دی۔'

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں