مسلم ممالک غزہ میں جنگ بندی کامطالبہ نہ کریں ،اسرئیل سے تعلقات توڑ یں: علی خامنہ ای

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

ایرانی سپریم لیڈر علی خامنہ ای نے مسلم ممالک پر زور دیا ہے کہ وہ ایسامطالبہ نہ کریں جو ان کے بس میں ہی نہیں ہے بلکہ اسرائیل کے اختیار میں ہے۔ مسلم ممالک وہ مطالبہ کریں جو ان کے اپنے کنٹرول میں ہے۔

ایرانی خبر رساں ادارے ' ارنا ' کے مطابق ایرانی سپریم لیڈر نے کہا ہے ' مسلم ممالک کے بعض موقف اور بیانات غلط ہیں۔ جیساکہ ان کی طرف سے غزہ میں 'سیز فائر' کے حق میں بیانات ہیں۔ یہ بیانات ان کے بس میں نہیں ہیں۔ بلکہ یہ صہیونی ریاست کے کنٹرول میں ہے۔'

علی خامنہ ای نے کہا' اس لئے مسلم ممالک کو وہ کرناچاہئے جو ان کے کنٹرول اور اختیار میں ہو سکتا ہے. ان کے بقول مسلم ممالک کے بس میں یہ ہے کہ یہ ہے کہ یہ اسرائیل کی رگیں کاٹ دیں۔ اس مقصد کے لئے اسرئیل کے ساتھ اپنے سیاسی اور اقتصادی تعلقات اور معاہدات کو توڑ ڈالیں اور اسرائیل کی مدد کا ذریعہ نہ بنیں۔'

واضح رہے اسرائیل کی غزہ میں جاری جنگ کے دوران یہچوتھا موقع ہےکہ ایرانی سپریم لیڈر نے مسلم مملک سےاسرائیل کے ساتھ تعلقات اور معاہدات کے خاتمے کی بات کی ہے۔

اب تک اسرائیلی بمباری سے غزہ میں پچیس ہزار سے زائد فلسطینی ہلاک ہو چکے ہیں، ان میں بڑی تعداد بچوں اور عورتوں کی ہے۔جبکہ بیس لاکھ سے زیادہ فلسطینی بے گھر ہو چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں