امریکا نے ترکیہ کو F-16 طیاروں کی فروخت کا گرین سگنل دے دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی محکمہ دفاع پینٹاگان نے کہا ہے کہ محکمہ خارجہ نے تقریباً 23 بلین ڈالر مالیت کے معاہدے میں ترکیہ کو F-16 لڑاکا طیاروں اور متعلقہ ساز و سامان کی فروخت کے امکان پر اتفاق کیا ہے۔

امریکی محکمہ دفاع نے مزید کہا کہ دُنیا کی سب سے بڑی ملٹری انڈسٹریل کمپنی لاک ہیڈ مارٹن اس معاہدے کی مرکزی ٹھیکیدار ہے۔

ایک امریکی اہلکار نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر پریس کو بتایا کہ محکمہ خارجہ نے جمعے کے روز کانگریس کو باضابطہ طور پر مطلع کیا۔ اس دوہرے معاہدے کے میں یونان کے لیے F-35 طیارے بھی شامل ہیں۔

قبل ازیں جمعہ کو امریکی سینیٹ کی خارجہ تعلقات کمیٹی کے چیئرمین بین کارڈن نے جمعہ کو کہا کہ وہ لاک ہیڈ مارٹن کی طرف سے ترکیہ کو F-16 طیاروں کی فروخت کی تجویز کی حمایت کرتے ہیں۔ جب انقرہ نے سویڈن کی نیٹو میں شمولیت پر رضامندی ظاہر کی ہے۔

امریکی حکام نے بارہا کہا ہے کہ ترکیہ کی جانب سے نیٹو میں سویڈن کی رکنیت کی توثیق انقرہ کے لیے امریکی F-16 لڑاکا طیاروں کی خریداری کی راہ ہموار کرسکتی ہے۔

ترک صدر رجب طیب ایردوان نے جمعہ کے روزکہا تھا کہ ترکیہ نیٹو میں سویڈن کی درخواست کی توثیق کے بعد F-16 لڑاکا طیاروں اورجدید ساز و سامان کی خریداری کے لیے انقرہ کی درخواست میں امریکا کی جانب سے اگلے قدم کا انتظار کر رہا ہے۔

نیٹو کے سیکرٹری جنرل جینز اسٹولٹن برگ نے جمعے کے روز اس امید کا اظہار کیا تھا کہ ہنگری اور ترکیہ سے اس ہفتے مثبت اشارے ملنے کے بعد سویڈن مارچ تک نیٹو میں شمولیت کے لیے تیار ہو سکتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں