حادثے کا شکار ہونے والے روسی طیارے کے بلیک باکس سے کیا پتا چلتا ہے؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

روسی علاقے بیلگورود میں یوکرینی فوج کی طرف سے مار گرائے جانے والےطیارے کے حادثے ایک ہفتے بعد طیارے کے بلیک باکس کے ڈیٹا سے پتا چلتا ہے کہ جہاز کو باہر سے نشانہ بنایا گیا تھا۔

خیال رہے کہ اس طیارے کو گذشتہ ہفتے یوکرینی فوج کی طرف سے اس وقت مبینہ طور پر میزائل حملے میں مار گرایا گیا تھا جب وہ 65 یوکرینی قیدیوں کو لے جا رہا تھا۔

روسی قانون نافذ کرنے والے اداروں کے ایک ذریعے نے خبر رساں ادارے ’ٹاس‘ کوبتایا کہ ’ایل 76‘ طیارے کے "بلیک باکس‘‘ کے ڈیٹا میں کے تمام ممکنہ پہلو شامل نہیں ہیں۔ یہ اس بات کی تصدیق کرتا ہے کہ طیارہ بیرونی وجوہات کی بنا پر حادثے کا شکار ہوا اور باہر سے لگنےوالی کسی چیز نے اسے مار گرایا‘‘۔

انہوں نے مزید کہا کہ بلیک باکس ڈیٹا کا تجزیہ جاری ہےاور کام مکمل ہونے والا ہے۔ ہم جلدی میں نہیں ہیں"۔

گذشتہ بدھ کو روسی وزارت دفاع نے اعلان کیا کہ ایک Il-76 ملٹری ٹرانسپورٹ طیارہ یوکرین کی سرحد سے متصل روسی بیلگورود کے علاقے میں گر کر تباہ ہو گیا تھا۔

وزارت دفاع نے کہا کہ "ماسکوکے وقت کے مطابق تقریباً 11:00 بجے ایک ’ایل 76 ‘ طیارہ بیلگورود کے علاقے میں گر کر تباہ ہو گیا، جس میں 65 گرفتار یوکرینی فوجیوں کے کے علاوہ عملے کےچھ افراد سوار تھے۔

انہوں نے بتایا کہ "روسی فضائیہ کی ایک ٹیم طیارے کی تباہی کی وجوہات کا تعین کرنے کے لیے طیارے کے حادثے کی جگہ پر گئی تھی۔"

طیارے کو میزائلوں سے نشانہ بنایا گیا

دریں اثنا روسی پارلیمنٹ کے رکن اور ایک ریٹائرڈ جنرل آندرے کارتاپولوف نے کہا کہ جنوبی روس میں گر کرتباہ ہونے والا فوجی ٹرانسپورٹ طیارہ مغرب کی طرف سے یوکرین کی جانب بھیجے گئے تین میزائلوں کے ذریعے نشانہ بننے کے بعد گر گیا۔

کارتاپولوف نے اپنی معلومات کے ذرائع کا ذکر نہیں کیا۔ انہوں نے کہا کہ تحقیقات سے پتہ چلے گا کہ میزائل پیٹریاٹ تھے یا ایریس ٹی تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں