’ہفتے کے دن بیج بویا جائے تو جلد نشو نما پائے گا‘: سعودی ماہر موسمیات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب میں فروری کے پہلے ہفتے کے دوران کاشت کاری کے حوالے سے ایک قول مشہور ہے کہ ’اگر آپ ان دنوں میں اگانے اور کاشت کاری کے لیے کوئی بیج بونا چاہتے ہیں تو آج بہ روز ہفتہ لگا دیں۔ آج آپ جو بھی بوئیں گے وہ ضرور اگے گا"، لیکن اس یقین کے پیچھے کیا وجہ ہے؟

اس حوالے سے سعودی ماہر موسمیات خالد الزعاق کے کہتے ہیں کہ اس ہفتے کا پہلا دن ہے جسے "چھ بیج" کہا جاتا ہے میں ان چھ دنوں کے دوران موسم سرما اور گرمیوں کی تمام فصلیں لگائی جاتی ہیں۔

لوگ ان دنوں کو "چھ بیج" کہتے ہیں اور یہ سال کا واحد ہفتہ ہے جس میں سردیوں اور گرمیوں کی فصلیں لگائی جاتی ہیں، کیونکہ یہ "عقرب" سیزن کے آخری 3 دن اور "شبط" کے پہلے 3 دن ہوتے ہیں۔

اعلی معیار

الزعاق کے مطابق ان دنوں اگائی جانے والی فصلیں عام طور پر اعلیٰ معیار کی ہوتی ہیں، خاص طور پر پتوں والی سبزیاں معیاری سمجھی جاتی ہیں۔

زراعت کو تین حصوں میں تقسیم کیا گیا ہے: موسم گرما کی کاشت جو بہار کے موسم میں ہوتی ہے۔ سردیوں کی کاشت خزاں کے موسم میں ہوتی ہے اور مخلوط کاشت جسے’چھ بیج‘ کہا جاتا ہے ان دنوں میں ہوتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں