روس میں بھارتی سفارت خانے کا ملازم پاکستان کے لیے جاسوسی کے الزام میں گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ماسکو میں ہندوستانی سفارت خانے کے ایک ملازم کو مبینہ طور پر پاکستان کے لیے جاسوسی کرنے کے الزام میں گرفتار کیا گیا جو ایک ایسی پیشرفت ہے جو جنوبی ایشیائی ہمسایوں کے درمیان تعلقات کو خراب کر سکتی ہے۔

اتر پردیش پولیس کے ایک بیان کے مطابق ماسکو کے سفارت خانے میں ایک سیکورٹی اسسٹنٹ، ستیندرا سیوال کو اتوار کو اس وقت گرفتار کیا گیا جب ہندوستانی حکام کو پتہ چلا کہ وہ پاکستان کی جاسوسی ادارے انٹر سروسز انٹیلی جنس ایجنسی کی جانب سے کام کر رہا تھا۔

پولیس نے بیان میں کہا کہ 2021 سے ماسکو میں تعینات سیوال پر ہندوستان کے دفاع اور خارجہ تعلقات کے بارے میں معلومات لیک کرنے کا شبہ ہے۔

جاسوسی کے الزامات سے ہندوستان اور پاکستان کے درمیان تازہ کشیدگی کا خطرہ ہے جو کئی عشروں سے ساتھ رہنے کے لیے جدوجہد کر رہے ہیں۔ جوہری ہتھیاروں سے آراستہ ہمسایہ ممالک ہمالیہ کے ایک متنازعہ علاقے جموں و کشمیر پر تین جنگیں لڑ چکے ہیں جس پر دونوں حکومتیں دعویدار ہیں۔

وزارتِ خارجہ کے سینئر حکام جنہوں نے معاملے کی حساسیت کی وجہ سے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بات کی، ان کے مطابق ہندوستان کی وزارتِ خارجہ گرفتاری اور تفتیش کاروں کی مدد سے آگاہ ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں