لبنان کے جج نواف سلام عالمی عدالتِ انصاف کے صدر منتخب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

بین الاقوامی عدالتِ انصاف (آئی سی جے) نے ایک بیان میں کہا کہ لبنان کے جج نواف سلام کو منگل کو عدالت کا صدر منتخب کر لیا گیا۔

سلام 2018 سے آئی سی جے کے رکن ہیں۔ اس سے پہلے وہ دس سال تک اقوامِ متحدہ میں بیروت کے سفیر رہے۔

ایکس پر ایک پوسٹ میں سلام نے کہا کہ ان کا انتخاب ایک "بڑی ذمہ داری" ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ سب سے پہلی چیز جو ان کے ذہن میں آئی وہ "میرے شہر بیروت" کے لیے ان کی فکر تھی۔ آئی سی جے کے نومنتخب صدر نے لبنان سے مطالبہ کیا کہ وہ دوبارہ قانون کی حکمرانی اور اپنے عوام کے درمیان انصاف کی بالادستی کی پاسداری کا راستہ اختیار کرے۔

جدید تاریخ کے سب سے بڑے غیر جوہری دھماکوں میں سے ایک نے 2020 میں لبنان کے دارالحکومت بیروت کو ہلا کر رکھ دیا تھا۔ کسی سےجواب طلب نہ کیا گیا اور مطلوب اہلکار تفتیش کے لیے لبنان کی عدالتوں میں پیش ہونے سے انکاری ہیں۔

حالیہ برسوں میں سلام کا نام لبنان کے وزیرِ اعظم کے ممکنہ امیدوار کے طور پر سامنے آیا ہے۔ لیکن ایران کی حمایت یافتہ حزب اللہ نے ان کی نامزدگی کو یہ دعویٰ کرتے ہوئے روک دیا کہ وہ واشنگٹن کے بہت قریب ہیں۔ خصوصی ٹریبونل برائے لبنان کی سابقہ وکالت کے لیے بھی حزب اللہ سلام کی مخالفت کرتی رہی ہے جنہوں نے 2005 میں لبنان کے سابق وزیرِ اعظم رفیق حریری کے قتل کا ذمہ دار حزب اللہ کے اراکین کو قرار دیا تھا۔

لبنان کے النہار اخبار کے ڈپٹی ایڈیٹر انچیف نبیل بو منصف نے سلام کو ایک بہترین دوست قرار دیا۔ بو منصف نے ایکس پر ایک پوسٹ میں لبنان کی بے مثال معاشرتی و اقتصادی تباہی کا حوالہ دیتے ہوئے کہا، "ہماری قابلِ رحم تباہی کے وقت آپ ہمیں قابلِ فخر بناتے ہیں۔"

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں