"میکسیکو کے صدر سیسی"... بائیڈن کی زبان ایک بار پھر پھسل گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی صدر جو بائیڈن کی زبان پھسلنے سے کئی عجیب و غریب غلطیاں سرزد ہو چکی ہیں، جن میں سے تازہ ترین جمعرات کی شام وائٹ ہاؤس میں ایک پریس کانفرنس کے دوران سامنے آئی، جس میں غزہ کی جنگ کے بارے میں بات کر تے ہوئے انہوں نے کہا کہ “میکسیکو کے صدر سیسی”!

بائیڈن نے ایکس پلیٹ فارم (سابقہ ٹویٹر) پر وائٹ ہاؤس کے آفیشل پیج پر شائع ہونے والی پریس کانفرنس کے دوران کی ایک ویڈیو کلپ میں کہا: "جیسا کہ آپ جانتے ہیں، ابتدائی طور پر میکسیکو کے صدر، سیسی انسانی امداد کے داخلے کی اجازت دینے کے لیے دروازے نہیں کھولنا چاہتے تھے۔ میں نے ان سے بات کی اور انھیں دروازے کھولنے پر آمادہ کیا۔"

بائیڈن نے بات جاری رکھتے ہوئے کہا: "میں نے بی بی (اسرائیلی وزیر اعظم بنجمن نیتن یاہو کا عرفی نام) سے بات کی، اور میں غزہ میں انسانی امداد پہنچانے کے لیے سخت زور دے رہا تھا۔ وہاں بہت سے بے گناہ لوگ بھوک سے مر رہے ہیں، بہت سارے بے گناہ لوگوں کی مصیبت اور موت، اور یہ بند ہونا چاہیے۔"

امریکی صدر بائیڈن نے غزہ کی پٹی میں حماس کی طرف سے اسرائیل کے خلاف شروع کیے گئے حملے پر اسرائیلی فوجی ردعمل کو "ضرورت سے زیادہ" قرار دیا۔

بائیڈن نے کہا: "میں اب غزہ میں پائیدار جنگ بندی تک پہنچنے کے لیے سخت دباؤ ڈال رہا ہوں۔"

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں