تین اماراتی اور ایک بحرینی فوجی افسر صومالیہ کے فوجی اڈے پر حملے میں ہلاک

صومالی فوج کے اہلکاروں اور اماراتی ٹرینرز پر اس وقت فائرنگ کی جب وہ نماز پڑھ رہے تھے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

جنگ زدہ افریقی ملک صومالیہ کے دارالحکومت موغادیشو میں 10فروری کو ایک فوجی اڈے پر ہوئے حملے میں کم از کم پانچ فوجی ہلاک ہو گئے۔

خبر رساں ادارے رائٹرز کی رپورٹ کے مطابق متحدہ عرب امارات کی وزارت دفاع نے اپنے بیان میں کہا کہ اس کی مسلح افواج کے تین ارکان اور ایک بحرینی افسر اس حملے میں مارے گئے ہیں، وہ لوگ صومالی مسلح افواج کو تربیت دینے کے لیے وہاں موجود تھے۔

یو اے ای کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق اس حملے میں کچھ فوجی زخمی بھی ہوئے ہیں۔

حملے سے متعلق مزید تفصیلات شیئر نہیں کی گئیں، اس حوالے سے متحدہ عرب امارات کا کہنا ہے کہ تحقیقات جاری ہے اور صورتحال کا تعین کرنے کے لیے صومالی حکومت سے رابطے میں ہیں۔

ایک افسر نے رائٹرز کو بتایا کہ حملہ آور ایک نیا تربیت یافتہ صومالی فوجی تھا جسے متحدہ عرب امارات کے زیر انتظام گورڈن نامی فوجی اڈے پر گولی مار کر ہلاک کر دیا گیا۔

اس افسر نے بتایا کہ فوجی نے اماراتی ٹرینرز اور صومالی فوج کے اہلکاروں پر اس وقت فائرنگ کی جب وہ نماز پڑھ رہے تھے، اور اس حملے میں چار اہلکار زخمی جب کہ 5 فوجی ہلاک ہوگئے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں