غزہ میں جارحیت: ایران کا فیفا سے اسرائیل پر پابندی لگانے کا مطالبہ

ایرانی فٹ بال فیڈریشن نے فیفا سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اسرائیلی فیڈریشن کو فٹ بال سے متعلق تمام سرگرمیوں سے مکمل طور پر معطل کرے۔

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

ایران کی فٹ بال فیڈریشن نے ہفتے کے روز کہا کہ اس نے فٹ بال کی عالمی گورننگ باڈی فیفا سے کہا ہے کہ وہ غزہ میں ملک کی جنگ پر اسرائیل کی فٹ بال فیڈریشن کو معطل کر دے۔

ایرانی فٹ بال فیڈریشن کی ویب سائٹ پر پوسٹ کیے گئے ایک اعلان میں ایران نے فیفا سے کہا کہ وہ اسرائیلی فیڈریشن کو "فٹ بال سے متعلق تمام سرگرمیوں سے مکمل طور پر معطل" کرے۔

درخواست میں فیفا اور اس کی رکن انجمنوں کی جانب سے "فوری اور سنجیدہ اقدامات" کرنے کو بھی کہا گیا ہے تاکہ "اسرائیلی جرائم کے تسلسل کو روکا جائے اور معصوم لوگوں اور شہریوں کو خوراک، پینے کا پانی، ادویات اور طبی سامان فراہم کیا جائے۔"

غزہ میں جنگ کا آغاز 7 اکتوبر کو حماس کے اسرائیل کے خلاف ایک بے مثال حملے سے ہوا تھا۔ اسرائیل کے سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اس کے نتیجے میں تقریباً 1,160 افراد ہلاک ہوئے جن میں زیادہ تر عام شہری تھے۔

اس کے جواب میں اسرائیل نے حماس کو ختم کرنے کے عزم کا اظہار کیا۔ حماس کے زیرِ انتظام غزہ کی وزارتِ صحت کے مطابق اسرائیلی کارروائی میں اب تک کم از کم 27,947 افراد ہلاک ہو چکے ہیں جن میں زیادہ تر خواتین اور بچے ہیں۔

ایران نے حماس کے 7 اکتوبر کے حملے کو "کامیابی" قرار دیا ہے لیکن اس میں براہِ راست ملوث ہونے سے انکار کیا ہے۔

اسلامی جمہوریہ اپنے حلیف دشمن اسرائیل کو تسلیم نہیں کرتا اور ایرانی اور اسرائیلی کھلاڑیوں کے درمیان ہر طرح کے رابطے کو ممنوع قرار دیتا ہے۔

گذشتہ اگست میں سرکاری میڈیا نے رپورٹ کیا کہ ایرانی حکام نے ایک ویٹ لفٹر مصطفیٰ رجائی پر تاحیات پابندی لگا دی جب انہوں نے پولینڈ میں ایک تقریب میں اسرائیلی حریف سے مصافحہ کیا۔

ایرانی ویٹ لفٹنگ فیڈریشن نے مقابلے کے لیے وفد کے سربراہ حمید صالحینیا کو بھی برطرف کردیا۔

2021 میں ایران کے سپریم لیڈر علی خامنہ ای نے کھلاڑیوں پر زور دیا کہ "تمغہ حاصل کرنے کے لیے (اسرائیلی) مجرمانہ حکومت کے نمائندے سے مصافحہ نہ کریں۔"

اسکائی نیوز نے جمعرات کو رپورٹ کیا کہ فلسطین، سعودی عرب، قطر اور متحدہ عرب امارات سمیت شرقِ اوسط کی فٹ بال ایسوسی ایشنز کے ایک گروپ نے بھی "عالمی فٹ بال کے سربراہان سے کہا ہے کہ وہ غزہ میں حماس کے خلاف جنگ پر اسرائیل پر پابندی لگائیں۔"

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں