پیرس کے الجزائری مہاجرکی مدد سے فٹ پاتھ پرخاتون کے ہاں بچے کی پیدائش کا واقعہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فرانس اور الجزائر میں سوشل نیٹ پلیٹ فارمز فٹ پاتھ پر ایک خاتون کی بچے کی پیدئش کے واقعے میں مدد دینے پر الجزائری تارک وطن کی کوششوں کو سراہا جا رہا ہے۔

الجزائری شہری کو سڑک پر چلتے ہوئے ایک غیر متوقع واقعہ کا سامنا کرنا پڑا، لیکن اس نے پوری انسانیت اور ہمت کے ساتھ اس سے نمٹا اور ایک حاملہ خاتون کی جان بچانے میں کامیاب رہا۔

تفصیلات کے مطابق گذشتہ ہفتے پیزا آرڈر دینے کے لیے روانہ ہوتے ہوئے اس الجزائری 45 سالہ شہری کو حیران کن صورتحال کا سامنا کرنا پڑا۔

جبکہ ڈیلیوری مین جو کہ الجزائر میں ایک سابق فائر فائٹر بھی ہے اپنی موٹرسائیکل پر آرڈر ڈیلیور کرنے جا رہا تھا۔ اس نے پیرس میں سڑک کے وسط میں کیمرون کی ایک خاتون کو درد سے کراہتے ہوئے پایا۔ جب حاملہ خاتون کو تکلیف محسوس ہوئی اوراس نے اکیلے ہسپتال جانے کا فیصلہ کیا۔

الجزائری نے عورت کی حالت دیکھی تو اس نے ایک لمحے کے لیے بھی توقف نہیں کیا۔ اس کی مدد کرنے کے لیے رکا اور ایمرجنسی سروسز کو ماں کو ہسپتال لے جانے کی اطلاع دی بلکہ اس کے پیشہ ورانہ تجربے نے رابح کو اس قابل بنایا کہ وہ بچے کو جنم دینے کے دوران زیربحث خاتون کی مدد کرسکے۔ خاتون نے اس شخص کی مدد سے ہسپتال پہنچنے سے پہلے ہی فٹ پاتھ پربچے کو جنم دے دیا۔

اس کے بعد الجزائر کے اس بہادرانہ انداز کی ایک تصویر سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہی ہے جس میں اس شخص کو بچے کو گود میں اٹھائے ہوئے دکھایا گیا ہے۔

رابح نے کہا کہ "آج مجھے ریلیف کا کام کرنے سے بہت خوشی ہو رہی ہے۔ فٹ پاتھ پر ایک بچے کا استقبال کر کے میں بہت خوش ہوں۔ شاباش بہادر ماں اور اس کو مبارکباد پیش کرتا ہوں"۔

سوشل میڈیا صارفین نے رابح کی ہمت اور انسانیت کی تعریف کی۔ صارفین نے مطالبہ کیا کہ اس شخص کو انعام دیا جائے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں