امریکی فوج نے حوثیوں کے لیے جانے والی ایرانی اسلحے کی کھیپ ضبط کر لی: سینٹکام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکی سینٹرل کمانڈ نے جمعرات کو ایک بیان میں کہا کہ امریکی افواج نے ایران سے جدید روایتی ہتھیار اور دیگر مہلک جنگی امداد ضبط کر لی جو 28 جنوری کو بحیرۂ عرب میں ایک بحری جہاز پر یمن کے حوثیوں کے زیرِ قبضہ علاقوں کے لیے بھیجی گئی تھی۔

اس میں کہا گیا ہے کہ درمیانی فاصلے تک مار کرنے والے بیلسٹک میزائل کے اجزاء، دھماکہ خیز مواد، بغیر پائلٹ کے زیرِ زمین/سطحی گاڑی (یو یو وی/یو ایس وی) کے اجزاء، فوجی سطح کا مواصلاتی اور نیٹ ورک کا سامان، ٹینک شکن گائیڈڈ میزائل لانچر اسمبلیاں، اور دیگر فوجی اجزاء پر مشتمل 200 سے زیادہ پیکجز جہاز پر دریافت ہوئے ہیں۔

امریکی سینٹ کام کے کمانڈر مائیکل ایرک کوریلا نے کہا، "حوثیوں کو ایران کی طرف سے جدید روایتی ہتھیاروں کی مسلسل فراہمی بین الاقوامی جہاز رانی کی حفاظت اور تجارت کی آزادانہ روانی کو نقصان پہنچا رہی ہے۔"

یمن میں حوثی مزاحمت کاروں نے نومبر کے وسط سے بین الاقوامی تجارتی جہاز رانی کے خلاف بار بار ڈرون اور میزائل داغے ہیں اور کہا ہے کہ وہ غزہ میں اسرائیل کی فوجی کارروائیوں کے خلاف فلسطینیوں کے ساتھ اظہارِ یکجہتی کر رہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں