بائیڈن کے’مشرقی فلسطین‘ کے دورے میں تاخیرپرامریکی ناراض

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

امریکی صدر جو بائیڈن کو سوشل میڈیا پرامریکیوں کی طرف سے تاخیر سے اوہائیو کے ایک چھوٹے سے گاؤں’مشرقی فلسطین‘ جس کی آبادی 4000 نفوس سے کم ہے کے دورے پر تنقید کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

’مشرقی فلسطین‘ امریکی ریاست اوہائیو کا ایک دور افتادہ گاؤں ہے جس کے دورے کا اعلان صدر نے بہت پہلے کیا تھا مگر وہ اعلان کے باوجود بہت دیر بعد یہاں آئے۔ اس علاقے کا نام ’فلسطین‘ ہے مگر مشرق وسطیٰ میں موجود خطہ فلسطین سے اس کا کوئی تعلق نہیں۔

جوبائیڈن نے ایک سال سے زیادہ عرصہ قبل [378 دن پہلے] ’مشرقی فلسطین‘ کے دورے کا اعلان کیا تھ۔ 3 فروری 2023 کو ایک "زہریلی اور خطرناک" مواد سے لدی ٹرین اس جگہ پر پٹری سے اتر گئی اوراس پر لدے مواد کے پھیلنے سے اس گاؤں کی چھوٹی آبادی کو صحت اور ماحولیاتی بحران میں ڈال دیا تھا۔

تاہم وائٹ ہاؤس نے اعلان کیا کہ گذشتہ بدھ کوصدرنے یہ دورہ ٹرین کے پٹری سے اترنے کی پہلی برسی کی یاد میں کیا اور اس دورے میں تاخیر کرنے پر انہیں سیاسی رہ نماؤں اور مقامی باشندوں کی جانب سے تنقید کا سامنا کرنا پڑا۔ کیونکہ ایک سال سے زیادہ عرصے تک وہ متاثرہ علاقے کا دورہ نہیں کر سکے تھے۔

"فلسطین اور مشرقی فلسطین ایک ساتھ"

’مشرقی فلسطین‘ میں حادثے کا شکار ہونے والی مال بردار ٹرین پر سات لاکھ پاؤنڈ سے زیادہ "ونائل کلورائڈ" لے جا رہی تھی۔اس مواد کو پائپ، فرنیچر اور پیکیجنگ کی تیاری میں استعمال کیاجاتا ہے اور یہ کینسر پیدا کرنے والا خطرناک مواد ہے۔ یہ ٹرین جب پٹڑی سے اتر گئی تو امریکی انتظامیہ نے متاثرہ علاقے "مشرقی فلسطین" کے لیے ریسکیو ٹیمیں بھیجیں۔

لیکن وہاں کے باشندے مسلسل آلودگی پر اپنے تحفظات کا اظہار کرتے رہے اور بار بار صدر سے مطالبہ کرتے رہے کہ وہ ان کا دورہ کریں۔ جس نے وعدہ کیا لیکن انتخابی سال تک ایسا نہیں کیا۔

گذشتہ جنوری میں میئراور گاؤں کے رہائشی دونوں نے وائٹ ہاؤس کو خطوط بھیجے جس میں صدر بائیڈن سے کہا گیا کہ وہ خود ان کے بقایا خدشات کو سننے کے لیے ان سے ملیں۔ انھوں نے اپنے خط میں کہا کہ "ہم آپ سے یہ ثابت کرنے کے لیے کہتے ہیں کہ دنیا کا سب سے اعلیٰ دفتر ایسا کرتا ہے‘‘۔

بطور صدر "عوام کے لیے عوام کے ذریعے اور لوگوں کے لیے کچھ کریں۔ ہمیں یقین ہے کہ آپ کارروائی کریں گے۔ چنانچہ صدر نے ایسا ہی کیا۔ اس جگہ کا دورہ کیا اور ایک مختصر پریس کانفرنس کی۔

دیر سے ہونے والے دورے اور بائیڈن کی پریس کانفرنس پر تبصرہ کرنے والوں میں سے ایک کامیڈین ٹِم ینگ نے طنزیہ اندازمیں امریکی ٹیلی ویژن نیٹ ورک فاکس نیوز کو بتایا: "شاید بائیڈن کو لگتا ہے کہ وہ آج مشرقی فلسطین میں حماس کی قیادت سے ملاقات کر رہے ہیں"۔ تاجر اور سرمایہ کار ڈیوڈ او ساکس کے حوالے سے کہا کہ "بائیڈن پہلے صدر ہیں جن سے فلسطینی اور مشرقی فلسطینی دونوں نفرت کرتے ہیں"۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں