برطانیہ میں بلیک میلنگ کےشکار لڑکے کی کثیر منزلہ عمارت سے کود کر خود کشی کا واقعہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

برطانیہ میں لندن کی کیپیٹل پولیس کے ذریعہ کی جانے والی تحقیقات میں ایک ایسے جرم میں انکشاف ہوا ہے جو 2022 میں پیش آیا تھا۔ تفصیلات میں بتایاگیا ہے کہ دو سال قبل ایک شخص نے ایک نوجوان کو بلیک میل کیا اور اس کی برہنہ تصاویر دکھا کراس سے پیسے مانگےاور رقم نہ دینے پر تصاویر شائع کرنے کی دھمکی دی تھی۔ لڑکے نے رقم نہ ہونے پر ایک کثیر منزلہ عمارت سے کود کر خود کشی کرلی تھی۔

کیپیٹل پولیس کے ذریعہ کی جانے والی تحقیقات میں یہ نتیجہ اخذ کیا گیا ہے کہ 16 سال کی عمرکے طالب علم کوایک نامعلوم شخص کے پیغامات موصول ہوئے جس نے دھمکی دی کہ اگر اس نے اسے رقم نہ بھیجی تو وہ اس کی دو ننگی تصاویر سوشل میڈیا پرپوسٹ کردیا۔

اس شخص نے پیغام میں کہا کہ "کیا آپ کے خیال میں مجھے بلاک کرنے سے مجھے روکا جا سکتا ہے؟ آپ کیا چاہتے ہیں کہ میں کیا کروں، کیا آپ چاہتے ہیں کہ میں انہیں آپ کے تمام فالورز کو بھیج دوں؟ آپ مجھے صرف ایک سو پائونڈز کیوں نہیں دے سکتے؟"۔

مجرم نائیجیریا میں موجود

تفتیش سے یہ بھی پتا چلا کہ اس شخص خود کو چھپانے کے لیے ’وی پی این‘نیٹ ورکس کا استعمال کیا لیکن تفتیش کاروں کا خیال ہے کہ شاید وہ نائیجیریا میں مقیم رہا ہے۔

چونکہ مشتبہ شخص ان کے دائرہ اختیار سے باہر تھا لہذا تفتیش کاروں کا خیال تھا کہ عدالتی استغاثہ کا امکان نہیں ہے۔

دوسری طرف نوعمر لڑکے کے والد نے وضاحت کی کہ اس کا بیٹا " تصاویر شائع کرنے سے بچنا چاہتا تھا۔" انہوں نے کہا کہ "کاش وہ ہم سے بات کرتا۔ وہ ماضی میں ہمیشہ بہت کھلا رہتا تھا لیکن مجھے لگتا ہے کہ جب معاملات آن لائن ہوتے ہیں تو کوئی وقت نہیں لگتا۔ اس نے کوئی غلطی نہیں کی‘‘۔

نوجوان
نوجوان

الوداعی پیغامات

جنوبی لندن میں فرانزک عدالت کی تحقیقات سے پتہ چلا ہے کہ 27 اکتوبر 2022ء کی صبح لندن کے جنوب میں ایک کثیر منزلہ عمارت سے چھلانگ لگا دی۔

جبکہ معاون ڈاکٹر سیان ریوس نے کہا کہ ڈینل اپنی موت سے قبل گوگل پر نگرانی کے کیمرے اور سرچ آپریشن کی فوٹیج کے علاوہ اپنے والدین اور بھائیوں کو "الوداعی" پیغامات بھیجے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں