غزہ کے باشندے انسانی حقوق کی بدترین خلاف ورزیوں کا شکار: سعودی عرب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان نے غزہ میں جنگ سے نمٹنے کے دوہرے معیار کو مسترد کرتے ہوئے پٹی میں فوری جنگ بندی اور عالمی برادری سے اپنی ذمہ داریاں سنبھالنے کا مطالبہ کر دیا۔ شہزادہ فیصل نے انسانی حقوق کونسل کے 55 ویں اجلاس سے خطاب میں کہا کہ غزہ کے باشندے انسانی حقوق کی بدترین خلاف ورزیوں کا شکار ہیں۔

غزہ کی پٹی میں جنوبی رفح کا علاقہ: رائیٹرز
غزہ کی پٹی میں جنوبی رفح کا علاقہ: رائیٹرز
Advertisement

انہوں نے رفح پر کسی بھی اسرائیلی حملے کے تباہ کن نتائج سے بھی خبردار کیا اور انسانی حقوق کونسل کے مقاصد کے حصول کے لیے مناسب اقدامات کی اہمیت پر زور دیا۔ یاد رہے سات اکتوبر کو حماس کے جنگجوؤں نے جنوبی اسرائیل پر حملہ کیا جس میں 1,160 افراد ہلاک ہوئے تھے۔ اسی دن اسرائیل نے غزہ کی پٹی پر بمباری شروع کردی اور 27 اکتوبر کو غزہ کی پٹی میں زمینی کارروائی بھی شروع کردی تھی۔

اس جنگ میں اب تک اسرائیلی بربریت میں 30 ہزار کے قریب فلسطینی شہید ہو چکے ہیں۔ اسرائیل کا سب سے بڑا اتحادی امریکہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں اب تک تین مرتبہ ویٹو پاور کا استعمال کر چکا ہے تاکہ کونسل کو غزہ میں فوری جنگ بندی کے مطالبے سے روکا جا سکے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں