امریکی ائیر فورس کے اہلکارپر خفیہ معلومات کے افشا کا مقدمہ چلے گا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکی ائیر فورس نے اپنے اہلکارکے خلاف مقدمہ چلنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس اہلکار نے دفاعی امور سے متعلق خفیہ معلومات ایک غیر ملکی ڈیٹنگ ویب سائٹ پر ایک خاتون کے ساتھ شئیر کی تھیں۔

تریسٹھ سالہ ڈیوڈ فرینکلن سلیٹرکو اس واقعےکے بعد حراست میں میں لیا گیا ہے۔ منگل کے روز اسے ایک مقامی عدالت میں پیش بھی کیا جا رہا ہے۔ اس پر الزام عاید کیا گیا ہے کہ اس نے روس اور یوکرین جنگ سے متعلق خٖفیہ معلومات ای میل کے ذریعے اور آن لائن میسجینگ کے ذریعے افشا کی ہیں۔

بتایاگیا ہے کہ یہ معلومات یوکرین سے متعلقہ تھیں جو کسی خاتون کو منتقل کی گئی ہیں۔یہ خاتون یوکرین کی ہی رہنے والی ہے۔

اس امریکی اہلکار کو نے یہ معلومات کے اس فراہمی کے دوران سیکریٹ ایجنٹ اور سیکریٹ سنفارمیشن کا لفض بھی استعملا کیا ہے، جس کا مطلب ہے کہ انہیں معلوم تھا کہ یہ اطلاعات خفیہ نوعیت ہیں۔

الیٹر کے بارے میں کہا گیا ہے کہ اس نے امریکی فوج سے ریٹائرمنٹ لینے کے بعد ائیر فورس جوائن کی تھی۔ تاہم ائیر فورس میں وہ ایک سویلین ملازم کے طور پر کام کر رہا تھا۔ عدالتی و قانونی ذرائع کا کہنا ہے جرم ثابت ہونے کی صورت میں اسے امریکہ کی وفاقی عدالت سے دس سال تک کی سزا بھی سنائی جا سکتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں