بھارت میں سیاح خاتون کو7افراد نے زیادتی کا نشانہ بنایا، پولیس نے 120 ڈالرکامعاوضہ دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

گذشتہ چند دنوں سے ہندوستان اور پوری دنیا ایک خوفناک واقعے سے ہل گئی جس میں انڈیا میں ایک سیاح جوڑے پر حملہ اور خاتون کے ساتھ اجتماعی عصمت دری کی گئی۔ اس واقعے نے بڑے پیمانے پر غم و غصے کو جنم دیا۔

تازہ ترین کاروائی میں ، بھارتی حکام اور جوڑے نے اعلان کیا کہ پولیس نے 3 مردوں کو گرفتار کر لیا ہے اور اس واقعے میں ملوث 4 دیگر ملزمان کی تلاش کر رہی ہے۔

مقامی میڈیا کے مطابق، پولیس نے عصمت دری سے متاثرہ کے شوہر کو 10,000 روپے، جو کہ 120.60 ڈالر کے برابر ہے، معاوضہ ادا کیا۔

7 مرد

مشرقی ہندوستان کے شہر ڈمکا میں پولیس انسپکٹر پتامبر سنگھ کروار نے ہفتے کے روز صحافیوں کو بتایا کہ پولیس نے جوڑے ، جو کہ ہسپانوی شہری ہیں، کو مقامی وقت کے مطابق جمعہ کی رات تقریباً 11 بجے سڑک کے کنارے پایا۔ معلوم ہوا کہ ان پر تشدد کیا گیا تھا۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ زیر حراست افراد میں سے ایک نے حکام کو اس میں ملوث دیگر افراد کے نام بھی بتائے۔

تاہم، مجرم یا متاثرین کی شناخت کے بارے میں تفصیلات فراہم نہیں کیں۔

انہوں نے باری باری دو گھنٹے تک اس کی عصمت دری کی۔

ہسپانوی جوڑے وِسینٹے اور فرنینڈا نے ہفتے کے روز ہسپانوی ٹیلی ویژن چینل اینٹینا 3 کو ایک ویڈیو انٹرویو میں بتایا کہ دونوں افراد نے فرنینڈا کے ساتھ زیادتی کی اور وِسنٹ پر تشدد کرتے رہے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ واقعے کے بعد وہ اس جگہ کے قریب رہے جہاں ان پر حملہ کیا گیا تھا کیونکہ وہ قریبی ہوٹل تلاش کرنے سے قاصر تھے۔

فرنینڈا، جو برازیل اور ہسپانوی کی دوہری شہریت رکھتی ہیں، نے بھی انٹرویو میں کہا: "انہوں نے میرے ساتھ اجبتماعی زیادتی کی، اور وہ تقریباً دو گھنٹے تک کرتے رہے۔"

یہ بات قابل ذکر ہے کہ گذشتہ ہفتے کے آغاز میں، جوڑے نے اپنے مشترکہ انسٹاگرام اکاؤنٹ پر حملے کی تقصیلات بارے ایک ویڈیو کلپ پوسٹ کیا تھا، جہاں انہوں نے تقریباً 200,000 فالوورز کے سامنے موٹر سائیکل پر دنیا بھر کے اپنے دوروں کی تصاویر پوسٹ کی تھیں۔ لیکن ویڈیو اب دستیاب نہیں ہے۔

ایک نئے ویڈیو کلپ میں،دونوں اپنے چہرے پر زخموں کے ساتھ نمودار ہوئے، اور انہوں نے حمایت کے لیے اپنے فالوورز کا شکریہ ادا کیا۔

ہسپانوی وزارت خارجہ نے اتوار کو کہا کہ وہ علاقے میں اپنا عملہ بھیجے گا اور وہ حکام کے ساتھ رابطے میں ہے، جب کہ اس کے برازیلی ہم منصب نے اعلان کیا کہ اس نے نئی دہلی میں اپنے سفارت خانے کے ذریعے برازیلی شہری سے رابطہ کرنے کی درخواست کی ہے۔ اور یہ کہ یہ ہر ممکن مدد فراہم کی جائے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں