شمالی عراق میں ترکیہ کے فضائی حملے میں دو شہری ہلاک: رپورٹ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

دو عراقی سیکورٹی ذرائع نے جمعہ کو بتایا کہ شمالی عراق کے صوبہ دوہوک کے پہاڑی علاقے شیلادیز میں ترکیہ کے فضائی حملے میں دو شہری ہلاک ہو گئے ہیں۔

ترکیہ کی وزارتِ دفاع نے کہا کہ اس کی افواج نے شمالی عراق اور شمالی شام میں رات بھر دو فضائی حملے کیے جس میں عراق میں چھ اور شام میں سات جنگجو مارے گئے۔ سوشل میڈیا پلیٹ فارم ایکس پر اس کی پوسٹ نے مزید معلومات فراہم نہیں کیں۔

وزارت نے یہ نہیں بتایا کہ حملوں میں کن علاقوں کو نشانہ بنایا گیا اور یہ واضح نہیں ہے کہ آیا وزارت شمالی عراق میں ہونے والے اسی واقعے کا حوالہ دے رہی ہے جن کی اطلاع سکیورٹی ذرائع نے دی ہے۔

ہمسایہ ملک عراق میں کالعدم کردستان ورکرز پارٹی (پی کے کے) جو بنیادی طور پر شمالی عراق کے پہاڑی علاقے میں واقع ہے، ترکیہ اس کے خلاف اپنے حملے کے حصے کے طور پر باقاعدگی سے فضائی حملے اور سرحد پار کارروائیاں کرتا ہے۔

پی کے کے جسے ترکیہ، امریکہ اور یورپی یونین نے دہشت گرد گروپ قرار دیا تھا، نے 1984 میں ترکیہ کے خلاف ہتھیار اٹھا لیے تھے۔ لڑائی میں 40,000 سے زیادہ لوگ ہلاک ہو چکے ہیں۔

ترکیہ نے شامی کرد وائی پی جی ملیشیا کے خلاف شمالی شام میں کئی فوجی کارروائیوں اور بمباری کی مہم بھی چلائی ہے جسے وہ پی کے کے کی ایک شاخ قرار دیتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں