حوثیوں کے حملے جاری ہیں، عدن کے مشرق میں تجارتی جہاز کے قریب دھماکہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

برطانیہ کی میری ٹائم ٹریڈ آپریشنز اتھارٹی نے اتوار کو کہا ہے کہ اسے ایک تجارتی بحری جہاز کے قریب دھماکے کی اطلاع ملی ہے۔ یہ دھماکہ اس وقت ہوا جب وہ یمن کے شہر عدن سے 85 ناٹیکل میل مشرق میں سفر کر رہا تھا۔

برطانوی میری ٹائم اتھارٹی نے کہا کہ جہاز کے کپتان نے اسے مطلع کیا کہ اس کے جہاز کو کوئی نقصان نہیں پہنچا ہے اور وہ اپنی منزل کی طرف سفر جاری رکھے ہوئے ہے۔ عملے کے ارکان بھی محفوظ ہیں۔

اتھارٹی نے مزید کہا کہ حکام واقعے کی تحقیقات کر رہے ہیں اور علاقے میں گذرنے والے جہازوں کو مشورہ دیا کہ وہ محتاط رہیں اور کسی بھی مشکوک سرگرمی کی اطلاع دیں۔

اتھارٹی نے مزید تفصیلات فراہم نہیں کیں لیکن خطے میں حوثی گروپ کی جانب سے تجارتی جہازوں پر بار بار حملے دیکھنے میں آئے۔

حوثیوں کا کہنا ہے کہ وہ غزہ کی پٹی کے ساتھ اظہار یکجہتی کے لیے اسرائیلی کمپنیوں کے زیر ملکیت اسرائیل کو سامان کی سپلائی کرنے والے جہازوں کو نشانہ بنا رہے ہیں۔

امریکہ اور برطانیہ نے گذشتہ سال کے اواخر سے بحیرہ احمر اور خلیج عدن میں بحری ٹریفک اور بین الاقوامی تجارتی جہازوں کو نشانہ بنانے والے حوثی گروپ اور اس کی نقل و حرکت کی صلاحیتوں کو محدود کرنے کے لیے حملے شروع کیے ہیں۔

امریکی سینٹرل کمانڈ نے آج اتوار کی صبح کہا کہ امریکی افواج کل ہفتے کو حوثی گروپ سے تعلق رکھنے والی متعدد کشتیوں اور ڈرونز کو تباہ کرنے میں کامیاب رہی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں