امریکی فوج نے حوثیوں کی جانب سے داغے گئے بیلسٹک میزائل تباہ کر دیئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی فوج نے جمعرات کو کہا کہ اس نے دو بحری جہاز شکن بیلسٹک میزائل اور ایک بغیر پائلٹ کے سطحی بحری جہاز تباہ کر دیا ہے جو حوثیوں نے یمن سے داغا تھا۔

امریکی سینٹرل کمانڈ نے سوشل میڈیا سائٹ ایکس پر لکھا، "یہ بات طے شدہ تھی کہ یہ ہتھیار خطے میں اتحادیوں اور تجارتی جہازوں کے لیے خطرہ تھے۔"

امریکی محکمۂ دفاع کے ایک سینئر اہلکار نے جمعرات کو بتایا کہ یمن کی حوثی ملیشیا نے گذشتہ سال اپنے حملوں کے اواخر سے یمن کے پانیوں میں شہری اور فوجی دونوں جہازوں پر تقریباً 50 حملے کیے۔

امریکی اور برطانوی افواج کے مسلسل فضائی حملوں کے باوجود ایران کے حمایت یافتہ حوثی بحیرۂ احمر کے اہم تجارتی راستے پر جانے والے تجارتی جہازوں کو بدستور نشانہ بنا رہے ہیں۔

اسسٹنٹ سیکرٹری دفاع سیلسٹی والنڈر نے قانون سازوں کو بتایا، "بحیرۂ احمر میں تجارتی جہاز رانی اور بحری جہازوں کے خلاف کم از کم 50 حملوں سے حوثی عالمی تجارت کے لیے اس اہم راستے کو متأثر کرنا چاہتے ہیں۔"

نومبر میں اپنی مہم کا آغاز کرتے ہوئے حوثیوں نے غزہ میں فلسطینیوں سے اظہارِ یکجہتی کے طور پر خلیجِ عدن اور بحیرۂ احمر میں بحری جہازوں کو نشانہ بنایا ہے۔ ان کے حملے اسرائیلی، برطانوی اور امریکی جہازوں کے ساتھ ساتھ اسرائیلی بندرگاہوں کی طرف جانے والے جہازوں پر بھی جاری ہیں جس کے نتیجے میں یمن کے ساحل کے ساتھ سمندری ٹریفک میں خلل پیدا ہوتا ہے۔

ان حملوں کے نتیجے میں بحیرۂ احمر کے تجارتی راستے پر چلنے والے بحری جہازوں کے لیے بیمہ کی قیمت میں اضافہ ہوا ہے جس نے نقل و حمل کی کئی کمپنیوں کو افریقہ کے جنوبی سرے کے ارد گرد نمایاں طور پر طویل راستے کا انتخاب کرنے پر مجبور کر دیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں