سعودی عرب کی 800 ہیکٹر فلسطینی اراضی پر اسرائیلی قبضے کی مذمت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب نے اسرائیل کے مغربی کنارے میں فسطینی سرزمین کے 800 ہیکٹرز پر قبضے کی مذمت کی ہے۔

سعودی پریس ایجنسی کے مطابق بدھ کو وزارت خارجہ کی جانب سے جاری کیے بیان میں اسرائیلی اقدام کو بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی قرار دیا گیا ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ یہ اسرائیل کے اسی ظالمانہ سلسلے کی ایک کڑی ہے جو وہ اپنے جبری تسلط کے لیے جاری رکھے ہوئے ہے۔

مملکت کی جانب سے زور دیتے ہوئے کہا گیا ہے کہ اسرائیل کی جانب سے بلا روک ٹوک بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی سے بین الاقوامی نظام کی ساکھ بھی متاثر ہوتی ہے اور یہ دو ریاستی حل سے جڑے منصفانہ اور پائیدار امن کے امکانات کو بھی کم کرتا ہے۔

سعودی عرب نے ایک بار پھر عالمی برادری سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اسرائیل کی جانب سے فسطینی سرزمین پر منظم آباد کاری اور قوانین کی خلاف ورزی کو رکوائے اور غصب شدہ فلسطنین زمین واپس دلوائی جائے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں