روسی فوجی طیارہ سمندر میں گر کر تباہ، پائلٹ نے کود کر جان بچائی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

روس کے سیواستوپول شہر کے ماسکو کے مقرر کردہ گورنر کے مطابق ایک روسی فوجی طیارہ جمعرات کو جزیرہ نما کریمیا کے ساحل سے دور سمندر میں گر کر تباہ ہو گیا۔ اس جزیرے کوماسکو نے 2014ء میں ضم کر لیا تھا،

"طیارہ سمندر میں گر گیا"

گورنر میخائل رضاوزایف نے ٹیلیگرام ایپلی کیشن کے ذریعے ایک پیغام میں کہا کہ "ایک فوجی طیارہ سمندر میں گرا، تاہم اس حادثے کی کوئی وجہ سامنے نہیں آئی‘‘۔

سوشل میڈیا پر گردش کرنے والی فوٹیج میں ایک جلتا ہوا طیارہ آسمان سے گرتا ہوا دکھایا گیا ہے۔

سیواسٹوپول جو کہ روسی بحیرہ اسود کے بحری بیڑے کا تاریخی ہیڈکوارٹر ہے یوکرینی کریمین جزیرہ نما کے جنوبی سرے پر واقع ہے، جسے ماسکو نے 2014 میں الحاق کیا تھا۔

یہ خطہ دو سال قبل شروع ہونے والی یوکرین پر روسی جنگ کے دوران بار بار یوکرینی حملوں کا نشانہ بنا۔

’محفوظ طریقے سے چھلانگ لگائیں‘

رازوزایف نے مزید کہا کہ "پائلٹ نے بحفاظت چھلانگ لگائی اور اسے ساحل سے تقریباً دو سو میٹر دور سیواستوپول میں ریسکیو اہلکاروں نے نکال لیا۔ اس کی جان کو خطرہ نہیں‘‘۔

دیگر ویڈیوز میں پائلٹ کو چھلانگ لگانے کے بعد پیراشوٹ کرتے ہوئے دکھایا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں