’اسرائیلی فوج الشفا کمپلیکس میں گلی سڑی لاشوں کا ڈھیر چھوڑ کر علاقے سے واپس‘

اسرائیلی فوج نے مبینہ طور پر الشفا میڈیکل کمپلیکس سے عمارتوں کو جلانے اور اسے مکمل طور پر غیر فعال کرنے کے بعد وہاں سے انخلا کیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

غزہ میں حماس کے زیرِانتظام وزارت صحت نے کہا ہے کہ اسرائیلی فوج نے اس جگہ پر ایک بڑے آپریشن کے آغاز کے چند دن بعد محصور علاقے کے مرکزی ہسپتال الشفا کے کمپلیکس سے ٹینک اور گاڑیاں واپس بلا لی ہیں۔

وزارت صحت نے کہا ہے کہ پیر کو کمپلیکس سے درجنوں لاشیں ملی ہیں، جہاں سے جہاں اے ایف پی کے ایک صحافی اور عینی شاہدین نے ٹینکوں اور گاڑیوں کو باہر نکلتے دیکھا۔

اسرائیلی فوج نے فوری طور پر کسی انخلا کی تصدیق نہیں کی ہے۔

عینی شاہدین نے بتایا کہ کمپلیکس کے آس پاس کے علاقے پر درجنوں ہوائی حملے ہوئے اور گولے گرے۔

حماس کی حکومت کے میڈیا آفس کے مطابق اسرائیلی فضائی حملوں نے واپس جانے والی گاڑیوں کو کور فراہم کیا تھا۔

غزہ کے میڈیا آفس نے الشفا ہسپتال میں محاصرہ شروع ہونے کے بعد سے اب تک کے شہید ہونے والے فلسطینیوں کے اعداد وشمار جاری کیے تھے جس کے مطابق 400 سے زائد افراد جاں بحق ہو چکے ہیں، جن میں مریض، جنگ سے بے گھر فلسطینی اور ہسپتال کا عملہ شامل ہے۔

دوسری جانب عالمی ادارہ صحت کا کہنا ہے کہ 18 مارچ کو اسرائیل کی جانب سے ہسپتال پر محاصرہ شروع ہونے کے بعد سے اب تک 21 مریض جان سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔

غزہ میں وزارت صحت نے کہا ہے کہ ’ہسپتال سے درجنوں لاشیں ملی ہیں۔‘

قبل ازیں فوج نے کہا تھا کہ الشفا اور اس کے اطراف میں ہونے والی لڑائی میں 200 عسکریت پسند مارے گئے تھے۔

اسرائیلی فوج کی جانب سے ایک ویڈیو میں جاری کی گئی جس میں ہسپتال سے ہتھیار اور پیسے قبضے میں لینے کا دعویٰ کیا گیا تھا۔ اُن کے مطابق حماس اور اسلامک جہاد ان کا استعمال کر رہے تھے۔

تاہم حماس نے الشفا اور دیگر صحت کی سہولیات سے کام کرنے سے انکار کیا ہے۔

وزارت صحت نے ایک بیان میں کہا کہ ’الشفا میڈیکل کمپلیکس کے اندر اور اس کے آس پاس سے درجنوں لاشیں، جن میں سے کچھ گل سڑ چکی ہیں، برآمد کی گئی ہیں۔‘

بیان کے مطابق ’اسرائیلی فوج نے الشفا میڈیکل کمپلیکس سے عمارتوں کو جلانے اور اسے مکمل طور پر غیر فعال کرنے کے بعد وہاں سے انخلا کیا۔ کمپلیکس اور اس کے آس پاس کی عمارتوں کے اندر وسیع پیمانے پر تباہی ہوئی ہے۔‘

جائے وقوعہ پر موجود اے ایف پی کے ایک صحافی نے بتایا کہ کمپلیکس کے اندر کئی عمارتوں کو نقصان پہنچا ہے، کچھ جگہوں پر آگ لگنے سے نقصان ہوا ہے۔

ایک ڈاکٹر کے مطابق 20 سے زائد لاشیں نکالی جا چکی ہیں اور کچھ کو گاڑیوں نے واپس جاتے ہوئے کچلا ہے۔

غزہ میں جہاں جنگ سے لاکھوں افراد بے گھر ہوئے ہیں وہیں اسرائیلی فوج کے آپریشن کے قبل الشفا میں سینکڑوں افراد نے پناہ لی ہوئی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں