امریکہ ہمارےبغیر مشرق وسطیٰ میں اپنے مفادات حاصل نہیں کرسکتا: اسرائیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیل کے وزیر توانائی ایلی کوہن نےزور دے کر کہا ہے کہ مشرق وسطیٰ میں امریکہ کے اہداف اور مفادات اسرائیل کے بغیر حاصل نہیں ہو سکتے۔ اگر اسرائیل مدد نہیں کرے تو امریکہ کے لیے خطے میں اپنے مفادات کا حصول ممکن نہیں۔

انہوں نے کہا کہ غزہ جنگ کے حوالے سےامریکہ اختلافات امریکہ میں آئندہ نومبر میں ہونے والے انتخابات ہیں جن کی وجہ سے امریکہ غزہ جنگ کے حوالے سےاسرائیل پرنقطہ چینی کررہا ہے۔

کوہن نے ایلات شہر میں منعقدہ مقامی حکام کی ایک کانفرنس میں مزید کہا "اگر امریکہ ہمارا سب سے بڑا دوست اور جس کی میں بہت تعریف کرتا ہوں، اسرائیل کی ریاست کو مکمل تعاون فراہم نہیں کرتا تو اسے وہ بھی حاصل نہیں ہوگا جس کی وہ مشرق وسطیٰ میں تلاش کر رہا ہے‘‘۔

قبل از وقت انتخابات نہیں ہوں گے

ایلی کوہن نے اسرائیل میں قبل از وقت انتخابات کے انعقاد کے خیال کو بھی مسترد کرتے ہوئے کہا کہ "ہم ابھی بھی جنگ میں ہیں اور ہمیں رفح میں یہ عمل مکمل کرنے کی ضرورت ہے، ہمیں مغوی افراد کو واپس کرنے کی ضرورت ہے اور اس میں ایک بہت بڑا چیلنج ہے‘‘۔

باخبر ذرائع نے آج بدھ کو ’ایکسیس‘ نیوز ویب سائٹ کو بتایا کہ جنوبی غزہ کی پٹی میں رفح میں منصوبہ بند فوجی آپریشن کے حوالے سے امریکہ اور اسرائیل کے درمیان ہونے والی ایک ورچوئل میٹنگ دونوں فریقوں کے درمیان اختلافات کے سائے میں تھی، لیکن یہ عملی اور تعمیری تھی۔

ذرائع نے کہا کہ اسرائیل نے رفح شہر سے شہریوں کو نکالنے کے بارے میں خیالات پیش کیے اور اندازہ لگایا کہ اس میں کم از کم چار ہفتے لگیں گے۔ تاہم واشنگٹن نے اسرائیل کے اندازوں کو رفح سے شہریوں کو نکالنے کے لیے وقت کی ضرورت کے بارے میں تصورات کو "غیر حقیقی" قرار دیا اور کہا کہ اس عمل میں چار ہفتے نہیں چار ماہ لگ سکتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں