تائیوان میں 7.2 شدت کا زلزلہ، کئی عمارتیں ملبے کا ڈھیر بن گئیں، سونامی الرٹ جاری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

تائیوان کی سینٹرل ویدر ایڈمنسٹریشن (سی ڈبلیو اے) نے کہا ہے کہ بدھ کی صبح کو جزیرے کے قریب 7.2 شدت کا زلزلہ آیا۔ اس نے کہا کہ زلزلے کا مرکز ہوالین شہر سے پچیس کلومیٹر جنوب مشرق میں سطح زمین سے 15.5 کلومیٹر نیچے تھا۔

تائیوان کے نشریاتی ادارے ٹی وی بی ایس نے منہدم عمارتوں کی فوٹیج پوسٹ کی ہے۔

خبر رساں ادارے رائٹرز نے تائیوان کے فائر ڈپارٹمنٹ کا حولہ دیتے ہوئے بتایا کہ ایک شخص ہلاک اور ساٹھ سے زائد زخمی ہوئے ہیں۔

فائر ڈپارٹمنٹ کے حوالے سے خبروں میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ کم ا ز کم چھبیس عمارتیں منہدم ہو گئیں جن میں سے تقریباً نصف مشرقی شہر ہوالین میں تھیں۔

مقامی طورپر نشر ہونے والے فوٹیج میں تباہ شدہ عمارتوں کو خطرناک زاویوں پر جھکا ہوا دیکھا جاسکتا ہے۔

تائی پے کے سیسمولوجی سینٹر کے ڈائریکٹر وو چیئن فو نے صحافیوں کو بتایا کہ یہ زلزلہ پچھلے "پچیس سالوں میں اب تک کا سب سے طاقت ور زلزلہ تھا۔"

وو نے ستمبر 1999میں آنے والے 7.6 شدت کے زلزلے کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا کہ زلزلہ کا جھٹکا پورے تائیوان اور سمندری جزائر پر محسوس کیا گیا... یہ 1999کے زلزلے، جس میں 2400 افراد ہلاک ہوئے تھے، کے بعد سے پچیس سالوں میں سب سے طاقتور ہے۔"

مسٹر وو نے خبردار کیا کہ "لوگوں کو متعلقہ انتباہات اور پیغامات پر توجہ دینی چاہئے اور زلزلے سے انخلاء کے لیے تیار رہنا چاہئے۔"

تائیوان میں اکثر زلزلے کے جھٹکے آتے رہتے ہیں کیونکہ یہ جزیرہ دو ٹیکٹونک پلیٹوں کے سنگم کے قریب واقع ہے۔ جب کہ قریبی جاپان میں ہر سال زلزلے کے تقریباً 1500 جھٹکے محسوس کیے جاتے ہیں۔

جاپان میٹرولوجیکل ایجنسی (جے ایم اے) نے زلزلہ آنے کے بعد جاپان کے جنوبی جزائر میں سونامی کی وارننگ جاری کی تھی لیکن بعد میں اسے"مشورے" میں تبدیل کر دیا۔

جے ایم اے نے کہا کہ خطے میں ایک میٹر اونچی تک لہریں اٹھ سکتی ہیں۔

جے ایم اے نے بتایا کہ مقامی وقت کے مطابق صبح نو بجکر 18منٹ پر یوناگونی جزیرے پر 30سینٹی میٹر کا سونامی پہنچ گیا تھا۔

قبل ازیں جاپانی حکام نے اوکی ناوا کے جنوبی علاقے میں ساحل کے قریبی علاقوں میں انخلاء کی ایڈوائزی جاری کی تھی۔

جاپان کے قومی نشریاتی ادارے این ایچ کے نے ایک بینر پوسٹ کیا ہے جس پر لکھا ہے،"انخلاء! "

این ایچ کے کے ایک اینکر نے کہا، "سونامی آرہی ہے، براہ کرم فوری طورپر علاقہ چھوڑ دیں۔ رکیں نہیں، واپس نہ جائیں۔"

خبر رساں ایجنسی اے ایف پی نے جاپانی وزارت ٹرانسپورٹ کے ایک اہلکار کے حوالے سے بتایا کہ اوکی ناوا کے ناہا ہوائی اڈے پر پروازیں احتیاطی طور پر معطل کردی گئی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں