سلامتی کونسل اسرائیل کو جنگ بند کرنے پر مجبور کرے: عرب لیگ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

عرب لیگ کی کونسل نے ایک قرارداد جاری کی جس میں سلامتی کونسل سے مطالبہ کیا گیا کہ وہ اقوام متحدہ کے چارٹر کے باب ہفتم کے تحت ایک قرارداد منظور کرے جس میں اسرائیل کو غزہ میں جنگ بند کرنے پر مجبور کیا جائے۔

اپنے مندوبین کی سطح کے اجلاس میں عرب لیگ کی کونسل نے رفح میں کسی بھی اسرائیلی فوجی کارروائی سے خبردار کیا۔ یاد رہے رفح میں 15 لاکھ کے لگ بھگ پناہ گزین موجود ہیں۔

عرب قومی سلامتی پر حملہ

کونسل نے اجلاس کے بعد ایک بیان میں اس بات کی بھی تصدیق کی ہے کہ رفح پر حملے کو مجموعی طور پر عرب قومی سلامتی پر حملہ تصور کیا جائے گا، ایسا حملہ خطے میں امن کے مواقع کے خاتمے اور تنازعات کے پھیلاؤ کا باعث بنے گا۔ گزشتہ روز دمشق میں ایرانی قونصل خانے کو نشانہ بنائے جانے کے بعد کونسل نے کہا کہ شام کو اپنی سرزمین کے دفاع کا حق حاصل ہے۔

غزہ کی تعمیر نو

عرب لیگ کونسل کے رکن ممالک کے مندوبین نے بین الاقوامی برادری پر زور دیا کہ وہ غزہ کی تعمیر نو میں اپنی ذمہ داریاں ادا کرے اور 17 ہزار یتیم بچوں کی دیکھ بھال اور پرورش کے لیے ایک بین الاقوامی فنڈ قائم کرے اور اکیلے رہ جانے والے بچوں کو طبی اور نفسیاتی مدد فراہم کرے۔

کونسل نے اسرائیل کے اس حملے کی مذمت بھی کی جس میں وسطی غزہ میں دیر البلح میں ورلڈ سینٹرل کچن آرگنائزیشن کے ایک قافلے کو نشانہ بنایا گیا تھا اور اس میں امدادی تنظیم کے 7 کارکن ہلاک ہوگئے تھے۔

فوری کارروائی کا مطالبہ

اپنی قرارداد میں کونسل نے تمام ملکوں، پارلیمانوں، سول سوسائٹی، ٹریڈ یونینوں اور انسانی حقوق اور بین الاقوامی قانون سے متعلق فیڈریشنز کے ساتھ ساتھ انسانی حقوق کونسل سے مطالبہ کیا کہ وہ اسرائیل کی وحشیانہ کارروائیوں کے باعث صہیونی حکام کے خلاف فوری کارروائی کریں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں