’بیانات کی جنگ‘، اسرائیلی وزیر خارجہ کی ایران کو "فارسی" میں دھمکی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

تل ابیب اور تہران کے درمیان اشتعال انگیز بیان بازی کے جلو میں اسرائیلی وزیر خارجہ یسرائیل کاٹز نے آج بدھ کو ایران کو براہ راست دھمکی دیتے ہوئے کہا کہ اگر تہران نے اپنی سرزمین سے اسرائیل پر حملہ کیا تو اسرائیل فوری طور پر منہ توڑ جواب دے گا"۔

کاٹز نے عبرانی اور فارسی زبانوں میں "ایکس" پلیٹ فارم پر ایک ٹویٹ میں اپنا انتباہ جاری کیا جسے "ٹائمز آف اسرائیل" اخبار اور اسرائیلی "i24" ٹیلی ویژن نے شائع کیا گیا۔

اسرائیلی وزیر کی دھمکی ایک ایسے وقت میں سامنے آئی ہے جب اسرائیل نے تہران کے ساتھ بڑھتے تناؤ کے درمیان بڑے پیمانے پر فوجی مشقیں مکمل کرنے کا اعلان کیا ہے۔ یہ ایرانی سپریم لیڈر علی خامنہ ای کے اعلان کے فوراً بعد سامنے آیا ہے جس میں ان کاکہنا ہے کہ اسرائیل نے شام میں ایرانی قونصل خانے پر حملہ کرکے غلطی کی ہے۔

ایرانی ٹیلی ویژن نے خامنہ ای کے حوالے سے کہا کہ عیدالفطر کی نماز کے دوران اسرائیل کو دمشق میں قونصل خانے پر حملہ کرنے پر "مناسب سزا ملے گی"۔

کل منگل کو اسرائیلی چینل 12 نیوز نے فوجی حکام کے حوالے سے اطلاع دی کہ دمشق میں ایرانی سفارتی مشن پر مبینہ حملے پر ایرانی ردعمل عید الفطر کی چھٹی کے بعد تک نہیں آئے گا۔

’ٹائمز آف اسرائیل‘ کے مطابق حکام کو یہ بھی توقع ہے کہ اس حملے میں فوجی اور اسٹریٹجک اثاثوں کو نشانہ بنایا جائے گا، سویلین کو نہیں۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اسرائیل ایرانی پراکسیز کے ذریعے یا خود ایران سے حملوں کے امکان کی تیاری کر رہا ہے، جبکہ کثیر جہتی حملے کے امکان کو رد نہیں کیا جا رہا ہے۔

ایرانی حکام نے پہلے اس عزم کا اظہار کیا تھا کہ اسرائیل اس حملے کا جواب دے گا جس میں دمشق میں ایرانی قونصل خانے کو نشانہ بنایا گیا تھا۔

خامنہ ای کے مشیر یحییٰ رحیم صفوی نے اتوار کو خبردار کیا کہ اسرائیل کے سفارت خانے "اب محفوظ نہیں ہیں"۔

گذشتہ ہفتے اسرائیل نے اعلان کیا تھا کہ وہ اپنے دفاعی اقدامات کو مضبوط کر رہا ہے اور ایرانی دھمکیوں کے بعد جنگی یونٹوں کی اجازت کو عارضی طور پر معطل کر رہا ہے۔

ایران الزام عائد کرتا ہے کہ تہران کے جوہری پروگرام پرحملوں، تخریب کاری کے واقعات اور قتل و غارت گری کی لہر کے پیچھے اسرائیل کا ہاتھ ہے۔

یکم اپریل کو ایرانی پاسداران انقلاب نے شام اور لبنان میں پاسداران انقلاب کی قدس فورس کے کمانڈر بریگیڈیئر جنرل محمد رضا زاہدی، ان کے نائب محمد ہادی رحیمی اور قونصل خانے پر حملے میں ان کے ساتھ موجود پانچ افسران کے قتل کا اعلان کیا۔ انہیں ایک میزائل حملے میں نشانہ بنایا گیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں