مصری فضائیہ الرٹ، فریقین سے تحمل سے کام لینے پر زور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایک اعلیٰ سطحی مصری ذریعے نے خطے کی صورتحال خاص طور پر ایران-اسرائیل کشیدگی کے بعد ہونے والی پیش رفت پر نظر رکھنے کے لیے کرائسز سیل کے قیام کا اعلان کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ یہ سیل ملک کے تمام متعلقہ اداروں سے تشکیل دیا گیا ہے اور وہ چوبیس گھنٹے صورتحال میں پیشرفت کی پیروی کرے گا۔ یہ سیل اپنی رپورٹ صدر عبدالفتاح السیسی کو پیش کرے گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ مصر خطے میں کشیدگی کو روکنے اور امن و امان کے قیام کے لیے تمام فریقوں کے ساتھ اپنے رابطوں کو تیز کرتا جا رہا ہے۔

مصر کے سرکاری میڈیا نے ایک اعلیٰ سکیورٹی ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ "فضائی دفاع ہائی الرٹ پر ہے"۔

اسرائیل نے ہفتے کی شام اعلان کیا کہ ایرانی ڈرونز کا ایک بیراج اس کی طرف روانہ کیا گیا ہے اور دفاعی نظام انہیں مار گرانے کے لیے تیار ہے۔ کسی بھی خطرے والے علاقے کے رہائشیوں کو پناہ لینے کے لیے کہا جا سکے۔

اسرائیلی فوج کے چیف ترجمان ڈینیئل ہاگری نے پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ ڈرونز کو اسرائیل پہنچنے میں کئی گھنٹے لگیں گے۔

مصرنے اسرائیل کے خلاف اعلان کردہ ایرانی جارحانہ ڈرونز اور حالیہ عرصے کے دوران دونوں ممالک کے درمیان خطرناک کشیدگی کے اشارے پراپنی گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے خطے اور اس کے عوام کو مزید تباہی سے بچانے کے لیے انتہائی تحمل سے کام لینے پر زور دیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں