ٹیسلا نے فنی خرابی کے باعث ٹرکوں کی کھیپ مارکیٹ سے واپس بلا لی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

دنیا کی معروف ٹرک ساز کمپنی ٹیسلا نے اپنے تیار کردہ تقریباً چار ہزار سائبر ٹرک مارکیٹ سے واپس منگوا لیے ہیں ۔ ٹیسلا کمپنی نے یہ فیصلہ اس لئے کیا ہے کہ ان ٹرکوں کے اس کھیپ کو اب تک خرید کر بروئے کار لانے والوں نے یہ شکایت کی تھی کہ ان ٹرکوں کے ' ایکسیلیٹر ' خود ہی متحرک ہو جاتے ہیں اور گاڑی خود بخود تیز ہو جاتی ہے جس کے بعد حادثات کا خطرہ بڑھ جاتا ہے ۔

یہ شکایت نیشنل ہائی وے کی انتظامیہ کی طرف سے بھی سامنے آئی تھی کہ اس سے ٹریفک میں خلل آ جاتا ہے اور حادثات ہو سکتے ہیں۔ ٹیسلا کے مطابق اس کے 3878 سائبر ٹرک جو اس تکنیکی خرابی والی کھیپ میں بن کر مارکیٹ میں موجود تھے انہیں واپس بلا لیا ہے۔

واپس بلائی گئی کھیپ نومبر 2023 سے اپریل 2024 کے درمیان تیار ہوئی تھی۔ جسے مارکیٹ میں بھیجنے کے ساتھ ہی واپس بلا لیا گیا ہے۔ تاہم پچھلے پیر تک ٹیسلا کے لئے ایسی کوئی اطلاعات نہیں تھیں کہ کسی جگہ کوئی حادثہ ہوا ہو یا کوئی زخمی ہوا ہو۔

ٹیسلا کمپنی نے بتایا ہے کہ ان واپس منگوائے گئے سائبر ٹرکوں میں فٹ کرنے کے لیے نئے سرے سے پیڈل بنانا شروع کر دیے گئے ہیں۔ خیال رہے ٹیسلا 'ایلون مسک' کی زیر ملکیت بڑی کمپنی ہے۔ ٹیسلا کی طرف سے بتایا گیا ہے کہ ٹیسلا کسٹمر سروس کے لیے مالکان Tesla کسٹمر سروس سے اس نمبر 1-877-798-3752 کے ذریعے رابطہ کیا جا سکتا ہے۔ علاوہ ازیں وہ ٹرک جن کی واپسی کرانی ہو اس کے لیے SB-24-33-003 ٹیسلا کا نمبر ہے۔ امکان ہے کہ گاڑیوں کے مالکان کو جون میں خطوط بھیجے جائیں گے۔

ایلون مسک نے ماہ اکتوبر میں ہونے والی کانفرنس کال کے موقع پر کہا کہ ' سائبر ٹرک پر کام کر کے ہم نقصان میں گئے ہیں۔'

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں