ایرانی حملے سے اسرائیلی نیواتیم ایئر بیس پر ہونے والا نقصان سیٹلائٹ تصاویر میں واضح

سینکڑوں ڈرونز، بیلسٹک اور میزائلوں کے باوجود نیواتیم ایئر بیس پر مجموعی طور پر نقصان معمولی رہا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی ایسوسی ایٹڈ پریس کی طرف سے تجزیہ کردہ ایک سیٹلائٹ تصویر نے دکھایا ہے کہ 13 اپریل کو کئے گئے ایرانی حملے میں اسرائیل کے نیواتیم ایئر بیس کی ایک راہداری تباہ ہوگئی ہے۔ ایران کی طرف سے ڈرونز اور بیلسٹک اور کروز میزائلوں کے بھیجے جانے کے باوجود جنوبی اسرائیل میں نیواتیم ایئر بیس پر مجموعی طور پر نقصان معمولی رہا۔

اسرائیل کے فضائی دفاع اور لڑاکا طیاروں نے امریکہ اور برطانیہ کی حمایت کے ساتھ برسائے گئے ڈرونز اور میزائلوں میں سے زیادہ زیادہ تر کو مار گرایا تھا۔ گزشتہ ہفتے کے ایرانی حملے نے بیلسٹک میزائلوں کے بڑے ہتھیاروں کو براہ راست اسرائیل پر استعمال کرنے پر تہران کی آمادگی بھی واضح کردی۔ غزہ کی پٹی میں اسرائیل اور حماس کی جنگ کی وجہ سے مشرق وسطیٰ میں کشیدگی برقرار ہے۔

13 اپریل کے ایرانی حملے کے جواب میں 19 اپریل کو اسرائیل نے ایران کے علاقے اصفہان پر جوابی محدود میزائل حملہ کیا ہے۔ اسرائیل اور ایران کے کمزور ردعمل دونوں ملکوں کی پس پردہ جنگ کو مزید نہ بڑھانے کی خواہش کی عکاسی کر رہا ہے۔ ’’پلینیٹ لیبز بی بی سی‘‘ نے جمعہ کو لی گئی تصاویر میں القدس سے 65 کلومیٹر جنوب میں نیواتیم ایئر بیس کے جنوبی نصف حصے میں طیارے کے ہینگرز کے قریب ایک راہداری پر ایک نیا سیاہ دھبہ دکھایا۔

اسرائیلی اخبار ’’ ہارٹز‘‘ نے جمعرات کو اس سائٹ کی کم معیار کی تصاویر شائع کی تھیں اور واضح کیا تھا کہ قریبی ہینگرز میں ’’ سی 130‘‘ کارگو طیارے رکھے گئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں