ڈونلڈ ٹرمپ نے امریکی تعلیم گاہوں میں جنگ مخالف ریلیوں کو بد ترین نفرت کا نام دے دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

اگلے صدارتی انتخاب میں ایک مرتبہ پھر امیدوار کے طور پر سامنے آنے والے سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے حالیہ دنوں میں امریکی یونیورسٹیوں اور دوسری تعلیم گاہوں میں اساتذہ اور طلبہ کے جاری احتجاج کا سنہ دو ہزار سترہ کے سفید فاموں کے ساتھ تقابل کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ موجودہ احتجاج کے سامنے مونگ پھلی کے چھوٹے دانے کی طرح تھا۔

سابق صدر ٹرمپ نے طلبہ کی طرف سے غزہ میں جاری جنگ کے خلاف بالعموم پر امن مظاہرے ہی کر رہے ہیں۔ جبکہ صدر ٹرمپ تھے تو ورجینیا میں سفید فاموں کے مظاہروں کے دوران ایک خاتون کی ہلاکت بھی ہوئی تھی۔ مگر اس کے باوجود سابق صدر نے آجکل جاری مظاہروں کو زیادہ سنگین اور نفرت انگیز قرار دیا ہے۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے یہ بات نیو یارک سٹی میں عدالت میں اپنی پیشی کے بعد اپنے ایک بیان میں کیا ہے۔انہوں نے کہا ' چارلوٹس ولی تو ایک مونگ پھلی کے چھوٹے دانے کے برابر تھا۔ اسرائیل کے خلاف احتجاج اس کے مقابلے میں بد ترین ہے۔ وہ تو جاری احتجاج کے سامنے کچھ بھی نہیں تھا۔' بعد ازاں ٹرمپ نے اپنے اس موقف کا اظہار بدھ کے روز سوشل میڈیا پلیٹ فارم پر بھی کیا ہے۔

یاد رہے جب دو ہزار سترہ میں ہونےوالے احتجاج کے رد عمل میں بھی احتجاج سامنے آیا تو ٹرمپ پر سخت تنقید ہوتی رہی۔

صدر جو بائیڈن جن کے مقابلے میں ایک بار پھر ڈونلڈ ٹرمپ صدارتی امیدوار کے طور پر موجود ہیں کی اسرائیل کی غزہ میں جنگ کے بارے پالیسی پر امریکی نوجوان بالعموم اور یونیورسٹیوں کے باشعور طلبہ بالخصوص بر سر احتجاج ہیں۔ ان کے لئے تشویشنا بات جہاں دوتہائی بچوں اور فلسطینی عورتوں کے ساتھ 34300 سے زائد افراد کی ہلاکت ہے وہیں جوبائیڈن انتظامیہ کا جنگ بندی قرار داد کے خلاف بار بار ویٹو کرنا اور اسرائیلی جنگ کو بھڑکائے رکھنے کے لئے اربوں ڈالر مالیت کے جنگی اسلحہ کی کھیپ در کھیپ فراہمی بھی ہے۔

جو بائیڈن انتظامیہ کی پالیسی کی مخالف پر مبنی مظاہروں کی وجہ سے اب تک پانچ سو کے لگ بھگ طلبہ حراست میں لیے جا چکے ہیں ۔ ابھی احتجاج بھی جاری یے اور گرفتاریاں بھی۔ حتی کہ یونیورسٹیوں کے اساتذہ بھی احتجاج کا حصہ ہیں اور ان کو بھی کئی جگہوں پر باز پرس کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

منگل کے روز ٹرمپ نے صدر جوبائیڈن کو اس جاری احتجاج کا ذمہ دار قرار دیتے ہوئے کہا ۔ ' ہمارے پاس ایک شخص جو اس وقت ملک میں پائی جانے والی صورت حال کو سمجھنے سے ہی قاصر ہے۔ '

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں