حوثی حملے کا نشانہ بننے والے بحری جہاز نے سفر مکمل کر لیا: امریکی سنٹرل کمانڈ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

یمن میں حوثیوں کی جانب سے بحیرہ احمر میں اینڈرومیڈا اسٹار آئل ٹینکر پر بمباری کے دعوے کے بعد امریکی سنٹرل کمانڈ نے جہاز پر حملے کی تفصیلات جاری کی۔

امریکی سنٹرل کمانڈ کے مطابق جہاز کو معمولی نقصان پہنچا ہے جس کے بعد جہاز نے اپنا سفر جاری رکھا۔ جہاز کے متعلق بتایا گیا کہ پاناما کا جھنڈا لہرانے والا جہاز ایک برطانوی کمپنی کی ملکیت ہے۔

برطانوی میری ٹائم سکیورٹی ایجنسی ایمبرے نے کہا کہ جہاز کے کپتان نے اطلاع دی کہ اسے نقصان پہنچا ہے۔ اس نے کہا کہ جہاز کا موجودہ مالک سیشلز میں رجسٹرڈ ہے۔

امریکی فوج کا کہنا ہے کہ حوثیوں نے یمن کے علاقوں سے بحیرہ احمر کی طرف تین اینٹی شپ بیلسٹک میزائل داغے جس سے دو بحری جہازوں میں سے ایک اینڈرومیڈا اسٹار کو معمولی نقصان پہنچا۔

امریکی سینٹرل کمانڈ نے ایکس ویب سائٹ پر لکھا کہ ایک میزائل "مائیشا" نامی دوسرے جہاز کے قریب گرا، لیکن اسے کوئی نقصان نہیں پہنچا۔

حوثیوں نے یمن میں صعدہ گورنری کی فضائی حدود میں ایک امریکی MQ9 ڈرون کو مار گرانے کا بھی اعلان کیا۔

دو حملوں کا نشانہ بننے کے بعد ایک جہاز کو نقصان پہنچا

قبل ازیں برٹش میری ٹائم سکیورٹی ایجنسی (یو کے ایم ٹی او) نے جمعے کو اطلاع دی تھی کہ موخا کے یمنی ساحل پر یکے بعد دیگرے دو حملوں کے نتیجے میں ایک جہاز کو نقصان پہنچا ہے۔

برطانوی رائل فورسز کے زیر انتظام ایجنسی نے "ایکس" پلیٹ فارم پرایک پوسٹ میں کہا کہ اسے یمن میں موخا سے 14 سمندری میل جنوب مغرب میں "دو حملوں کے بارے میں ایک جہاز سے اطلاع ملی"۔

انہوں نے مزید کہا کہ "پہلے حملے کے دوران جہاز کے قریب ایک دھماکہ دیکھا اور عملے نے اسے محسوس کیا اس کے بعد جہاز پر دوسرا حملہ دو میزائلوں سے ہوا جس سے جہاز کو نقصان پہنچا‘‘۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں