مشتبہ شخص کے لندن میں تلوار حملے میں متعدد افراد زخمی، پولیس ہائی الرٹ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

لندن میں تلوار کے حملے کے نتیجے میں متعدد افراد کے زخمی ہونے کے واقعے کے بعد سکیورٹی ہائی الرٹ کردی گئی ہے۔

العربیہ اور الحدث چینلوں کے نامہ نگار نے اطلاع دی ہے کہ برطانوی دارالحکومت لندن کے سب وے اسٹیشنوں میں خوف وہراس پھیلانے والے واقعے کے بعد پولیس اور ایمبولینسیں پہنچی جس نے وہاں سے تلوار کے وار سے زخمی ہونے والے چار افراد کو شمال مشرقی لندن کے ہسپتال منتقل کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ پولیس نے بعد میں ایک مشتبہ شخص کو گرفتار کیا جس نے ہینالٹ اسٹیشن کے آس پاس خوف کی فضا پیدا کی تھی۔

چیخ پکار اور خوف ہراس

نامہ نگار نے بتایا کہ کہ پولیس اب تک دہشت گردی کے شبہ کو مسترد کرتے ہوئے دیگر مشتبہ افراد کی تلاش نہیں کر رہی ہے۔

دوسری جانب لندن ایمبولینس سروس نے کہا کہ ہنگامی امدادی کارکنوں نے پانچ زخمیوں کو فوری طبی امداد فراہم کی جس کے بعد انہیں مزید علاج کے لیے ہسپتال منتقل کردیا گیا۔

سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ایک ویڈیو میں مشتبہ شخص کو تلوار طرح لہراتے ہوئے دکھایا گیا ہے۔ اس نے گرفتاری سے قبل شیخ پکار کی اور خوفناک آوازیں نکالیں۔

مقامی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق علاقے کے مکینوں نے اطلاع دی کہ وہ ایک بہت تیز چیخ سے بیدار ہوئےاور پھر وہ اپنے گھروں کے باہر "خون میں لت پت" ایک شخص کو دیکھ کر حیران رہ گئے۔

انہوں نے بتایا کہ دو پولیس افسران اور ایک شہری کو تیس سالہ شخص نے چاقو مارا تھا۔

بعد ازاں ایک بیان میں پولیس نے وضاحت کی کہ انہیں یہ اطلاع ملی تھی کہ تھرلو گارڈن کے علاقے میں ایک کار ایک گھر میں گھس گئی تھی اور ایک حملہ آور نے کئی لوگوں کو چاقو مارا تھا۔

پولیس افسران نے مشتبہ شخص کو گرفتار کرنے کے بعد بتایا کہ اس کی عمر 36 سال ہے۔

چاقو مارنے کا دل دہلا دینے والا واقعہ

ڈپٹی اسسٹنٹ کمشنر آف پولیس، ایڈی اڈیلیکن نے علاقے کے رہائشیوں کے ساتھ اپنی ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ "یہ ایک خوفناک حادثہ ہے۔ میں جانتا ہوں کہ ہر کوئی حیران اور پریشان ہے اور جاننا چاہتا ہے کہ کیا ہوا۔ہم جلد از جلد مزید معلومات فراہم کریں گے۔

تاہم انہوں نے مزید کہا کہ پولیس سمجھتی ہے کہ یہ کوئی دہشت گردی کا واقعہ نہیں اور شہریوں کو مزید پریشان ہونے کی ضرورت نہیں۔

اس واقعے کے بعد برطانوی وزیر اعظم رشی سونک نے کہا کہ "چاقو گھونپنے کا واقعہ چونکا دینے والا ہے اور یہ تشدد ہے جس کی ہمارے ملک میں کوئی جگہ نہیں ہے"۔

فی الحال پولیس نے سکیورٹی الرٹ کردی ہے البتہ واقعے میں ملوث ملزم کی مزید شناخت سامنے نہیں آئی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں