بھارتی دارالحکومت میں بم کی افواہ کے بعد 50 سے زائد سکول خالی کرا لیے گئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

پولیس نے کہا کہ بھارت کے قومی دارالحکومت کے علاقے میں بدھ کے روز ای میل کے ذریعے بم کی دھمکی ملنے کے بعد درجنوں سکولوں کو خالی کرا لیا گیا۔ پولیس نے مزید کہا کہ سکولوں کی تلاشی کے دوران "کوئی قابلِ اعتراض" مواد نہیں ملا۔

حکام نے بتایا کہ دہلی اور نوئیڈا کے ملحقہ مضافاتی علاقے میں 50 سے زیادہ سکولوں کو دھمکی آمیز ای میل موصول ہوئی جس سے والدین میں خوف و ہراس پھیل گیا اور سکولوں نے فوری کارروائی کرتے ہوئے طلبا کو گھر بھیج دیا۔

ٹیلی ویژن کے مناظر میں دکھایا گیا ہے کہ والدین پورے علاقے میں سکولوں کے دروازوں کے باہر کھڑے بچوں کو لینے کا انتظار کر رہے تھے جبکہ پولیس ٹیموں، جاسوس کتوں والے سکواڈز اور بم ڈسپوزل سکواڈ نے احاطے کا معائنہ کیا۔

اس افواہ کی وجہ سے اول سے بارہویں جماعت تک کے ہزاروں سکول طلباء متأثر ہوئے۔

دہلی پولیس نے ایک بیان میں کہا، "دہلی پولیس نے پروٹوکول کے مطابق ایسے تمام سکولوں کا مکمل معائنہ کیا ہے۔۔ ایسا معلوم ہوتا ہے کہ یہ اطلاعات محض افواہ ہیں۔" پولیس نے دھمکی کے بارے میں مزید تفصیلات جاری نہیں کیں۔

وزارت داخلہ نے کہا کہ سکیورٹی ایجنسیاں "تمام ضروری اقدامات" کر رہی ہیں۔

دہلی کے وزیرِ تعلیم آتشی جو صرف ایک نام کا استعمال کرتے ہیں، نے لوگوں سے پریشان نہ ہونے کی استدعا کی۔ نیز انہوں نے کہا کہ جہاں بھی ضرورت ہوگی، سکول کے حکام والدین کے ساتھ رابطے میں رہیں گے۔

کچھ سکول جنہیں دھمکی آمیز ای میل نہیں ملی، نے بھی والدین کو پیغامات بھیجے کہ وہ اپنے بچوں کی حفاظت کے بارے میں یقین دہانی کرائیں۔

ماضی میں بھی نئی دہلی کے سکولوں کو ایسی دھمکیاں بھیجی گئی تھیں لیکن یہ دھوکہ دہی اور افواہ ثابت ہوئیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں