"شام: ایک سال قبل امریکی ڈرون حملے میں القاعدہ رہنما نہیں عام شہری ہلاک ہوا تھا"

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

پینٹاگون نے اپنی داخلی تحقیقات کے بعد مرتب کردہ رپورٹ میں تسلیم کر لیا ہے کہ شام میں ایک ڈرون حملے میں شہری کی ہلاکت ہوئی تھی۔ امریکہ کی طرف سے یہ ڈرون حملہ پچھلے سال یعنی 2023 میں کیا گیا تھا۔

پینٹاگون کی تحقیقات سے متعلق واشنگٹن پوسٹ نے یہ خبر جمعرات کے روز اپنی اشاعت کا موضوع بنائی ہے۔ جس میں پینٹاگون نے ایک شامی شہری کی غلطی سے ہلاکت تسلیم کی ہے۔

واشنگٹن پوسٹ کے مطابق امریکی سنٹرل کمانڈ کا اس سے قبل دعویٰ تھا کہ اس نے القاعدہ کے ایک سینئر رہنما کو ڈرون حملہ کر کے ہلاک کیا تھا ۔ تاہم تحقیقات میں امریکی سنٹرل کمانڈ کا یہ دعویٰ غلط نکلا ہے۔ بلکہ تسلیم کیا گیا ہے کہ مارا جانے والا ایک عام شامی شہری تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں