برطانیہ کا اسرائیل کو اسلحہ برآمد کرنے کا نظام امریکہ جیسا نہیں ہے: کیمرون

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سکریٹری خارجہ ڈیوڈ کیمرون نے اسرائیل کو ہتھیاروں کی برآمدات کے برطانوی نظام اور پیمانے کو امریکہ کے نظام سے بالکل مختلف قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس کے لائسنس شدہ ہتھیاروں کی فروخت نسبتاً کم تھی اور سخت طریقۂ کار کے زیرِ نگرانی تھی۔

کیمرون اس سوال کا جواب دے رہے تھے کہ رفح پر بڑے حملے کی صورت میں امریکہ نے اسرائیل کو ہتھیاروں کی فراہمی بند کرنے کا جو انتباہ دیا ہے، کیا برطانیہ اس کی پیروی کرے گا۔

کیمرون نے ایک تقریر کے بعد کہا، "امریکہ اور برطانیہ کی صورتِ حال میں بہت بنیادی فرق ہے۔"

نیز انہوں نے کہا، "امریکہ اسرائیل کو ہتھیاروں کا ایک بڑا ریاستی فراہم کنندہ ہے۔۔ ہماری اسرائیل کو ہتھیاروں کی فراہمی برطانوی حکومت کی طرف سے نہیں ہے۔ ہمارے پاس بہت سے لائسنس ہیں اور میرے خیال میں اسرائیل کو ہماری دفاعی برآمدات نمایاں طور پر مجموعی حصے کے ایک فیصد سے بھی کم کے لیے ذمہ دار ہیں۔"

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں