اس سال 5000 فلپائنی عازمینِ حج کی مکہ مکرمہ روانگی کا امکان

حجاج کی اگلے ہفتے منیلا انٹرنیشنل ایئرپورٹ سے روانگی طے شدہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فلپائنی مسلمانوں کے قومی کمیشن نے پیر کے روز کہا کہ ہزاروں فلپائنی عازمین آئندہ حج کی سعادت حاصل کرنے کے لیے مکہ مکرمہ کا سفر کریں گے جن کا پہلا گروپ اگلے ہفتے سعودی عرب روانہ ہو گا۔

بنیادی طور پر کیتھولک مذہب والے فلپائن میں 120 ملین کے قریب آبادی کا تقریباً 10 فیصد مسلمان ہیں۔ زیادہ تر لوگ ملک کے جنوب میں جزیرے منڈاناؤ اور جزائر کے سلسلے سولو کے ساتھ ساتھ وسطی مغربی صوبے پالوان میں رہتے ہیں۔

کمیشن نے کہا کہ تقریباً 5000 مسلمانوں نے تصدیق کی ہے کہ وہ اس سال حج کی ادائیگی کے لیے سعودی عرب جائیں گے۔

این سی ایم ایف کے حج و اوقاف بیورو میں حج آپریشنز کے سربراہ زین الدین یوسودن نے کہا، "ہم پہلے ہی 96 فیصد عازمین کو پروسیس کر چکے ہیں۔"

نیز انہوں نے کہا، "وہ وی آئی پی جیسے سلوک کی توقع کر سکتے ہیں جس سے وہ اپنی زیارت پر پوری توجہ مرکوز کر سکیں گے۔"

کمیشن کے اہلکار اس بات کو یقینی بنانے کے لیے سخت محنت کر رہے ہیں کہ گذشتہ سال عازمین حج کو جو مشکلات درپیش تھیں، وہ اس بار کسی کو نہ ہوں۔

انہوں نے 2023 میں کھانے کی فراہمی میں تاخیر کے مسائل کا ذکر کرتے ہوئے کہا، "اس بار ہم اس بات کو یقینی بنا رہے ہیں کہ کھانے کا کوئی مسئلہ نہ ہو۔"

انہوں نے کہا، کمیشن مملکت میں خدمات فراہم کرنے والے ایک ادارے کے ساتھ کام کر رہا ہے جس نے سفر کے تمام پہلوؤں بشمول نقل و حمل کے لیے ہنگامی منصوبے تیار کیے ہیں۔

فلپائن سے پہلی حج پرواز 23 مئی کو منیلا انٹرنیشنل ایئرپورٹ سے روانہ ہونے والی ہے۔

حج اسلام کے پانچ ستونوں میں سے ایک ہے جو اس سال 14 سے 19 جون تک متوقع ہے۔ بہت سے حجاج اپنے قیام میں توسیع کرتے ہیں تاکہ اپنا مذہبی فریضہ پورا کرنے کے لیے زندگی میں ایک بار ملنے والے موقع سے زیادہ سے زیادہ فائدہ اٹھا سکیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں