اقوام متحدہ کی اعلیٰ عدالت اس ہفتے رفح پر اسرائیلی یلغار کی سماعت کرے گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اقوام متحدہ کی اعلیٰ عدالت نے کہا ہے کہ وہ جنوبی افریقہ کی جانب سے اسرائیل پر رفح حملے کو روکنے کے لیے ہنگامی احکامات نافذ کرنے کی درخواست پر جمعرات اور جمعہ کو سماعت کرے گی۔

ہیگ میں بین الاقوامی عدالت انصاف (آئی سی جے) جمعرات کو جنوبی افریقہ کے وکلاء کی سماعت کرے گی، جس کے بعد اگلے دن اسرائیل کا ردعمل سنا جائے گا۔

اس مہینے کے شروع میں پریٹوریا نے رفح میں دراندازی پر نام نہاد عارضی اقدامات کے لیے 'آئی سی جے' کو درخواست دی تھی جس میں عدالت سے کہا گیاتھا کہ وہ اسرائیل کو "فوری طور پر فوجی حملہ واپس لینے اور بند کرنے" کا حکم دے۔

اس نے عدالت سے یہ بھی درخواست کی کہ اسرائیل کو حکم دیا جائے کہ وہ غزہ تک انسانی امداد کی "بلا رکاوٹ" رسائی کو آسان بنانے کے لیے "تمام موثر اقدامات" کرے۔

اقوام متحدہ کی ایجنسیوں کا کہنا ہے کہ حالیہ دنوں میں رفح سے تقریباً 450,000 فلسطینی نئے مقامات پرمنتقل ہوئے ہیں اور تقریباً 100,000 شمالی غزہ سے ہیں۔

غزہ کی اب تک کی سب سے خونریز جنگ 7 اکتوبر کو حماس کے اسرائیل پر حملے کے بعد شروع ہوئی، جس کے نتیجے میں 1,170 سے زائد افراد ہلاک ہوئے، جن میں زیادہ تر عام شہری تھے۔

عسکریت پسندوں نے تقریباً 250 یرغمالیوں کو بھی یرغمال بنایا جن میں سے 128 تا حال یرغمال ہیں۔اسرائیل کے اندازے کے مطابق غزہ میں موجود36 یرغمالی ہلاک ہو چکے ہیں۔

غزہ کی وزارت صحت کے مطابق حماس کے خلاف اسرائیل کی جوابی کارروائی میں کم از کم 35,173 افراد ہلاک ہو چکے ہیں، جن میں زیادہ تر عام شہری ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں