امریکی فوج نے بحیرہ احمر پر داغے گئے دو ڈرونز اور ایک بیلسٹک میزائل تباہ کردیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی فوج نے آج منگل کی صبح بحیرہ احمر پر حوثیوں کی جانب سے داغے گئے دو ڈرونز اور ایک بیلسٹک میزائل کو تباہ کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔

امریکی سینٹرل کمانڈ نے کہا ہے کہ اس کی فورسز نے 13 مئی کو حوثیوں کی جانب سے بحیرہ احمر پر داغے گئے دو ڈرونز اور ایک بیلسٹک میزائل کو تباہ کر دیا۔ اس کارروائی میں کوئی جانی یا مالی نقصان نہیں ہوا۔

سینٹرل کمانڈ نے 'ایکس' پلیٹ فارم پرپوسٹ کردہ ایک بیان میں کہا کہ اس نے یمن میں حوثیوں کے زیر کنٹرول علاقوں میں ایک ڈرون کو تباہ کر دیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ امریکی ڈسٹرائر میسن نے بعد میں حوثیوں کی جانب سے بحیرہ احمر کے اوپر سے ایک بیلسٹک میزائل اور ایک ڈرون کو مار گرایا۔

امریکی سینٹرل کمانڈ نے اتوار اور پیر کی درمیانی شب کہا تھا کہ اس نے حوثیوں کی طرف سے خلیج عدن پربھیجےگئے ڈرون کو مار گرایا۔

امریکی سینٹرل کمانڈ نے وضاحت کی ہے کہ خلیج عدن پر حوثیوں کے ڈرونز سے تجارتی بحری جہازوں کو خطرہ لاحق ہے۔

امریکی سینٹرل کمانڈ نے کہا کہ اتوار کو صبح سویرے یمن میں حوثیوں کے زیر کنٹرول علاقے سے خلیج عدن کی طرف ایک ڈرون مارا گیا۔

انہوں نے کہا کہ حوثی گروپ جو یمن کے سب سے زیادہ آبادی والے علاقوں پر قابض ہے غزہ کی پٹی میں فلسطینیوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کے لیے کئی مہینوں سے ملک کے پانیوں میں بحری جہازوں پر حملے کر رہا ہے۔ ان حملوں نے تجارتی کمپنیوں کو افریقہ کے گرد طویل اور زیادہ مہنگے راستے پر جانے پر مجبور کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں