بحیرہ احمر میں اپنے فریگیٹس کو زمینی حملے کی صلاحیت فراہم کریں گے:برطانیہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

برطانوی وزیر دفاع گرانٹ شیپس نے زور دے کر کہا ہے کہ مستقبل کے تمام برطانوی بحریہ کے فریگیٹس زمین پر حملہ کرنے کی صلاحیتوں سے لیس ہوں گے۔

شیپس نے منگل کو "ایکس" پلیٹ فارم پر ایک ویڈیو ٹویٹ میں مزید کہا کہ "بحیرہ احمر میں ہماری کارروائیوں کو سمندر، فضا اور زمین پر اہداف کو تباہ کرنے کے قابل ہونا چاہیے"۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ پیشرفت نیوگیشن کی آزادی کو لاحق خطرات کی روک تھام، بڑھتی ہوئی کشیدگی اور صورتحال کا مقابلہ کرنے کے لیے ضروری ہے۔

بحری فوجی اتحاد

قابل ذکر ہے کہ گذشتہ 19 نومبر 2023ء سے یعنی غزہ کی پٹی میں اسرائیلی جنگ شروع ہونے کے ایک ماہ بعد حوثی گروپ نے اس اہم شپنگ لین میں کارگو جہازوں پر ڈرونز اور میزائلوں سے درجنوں حملے کیے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ وہ فلسطینیوں کی حمایت میں اسرائیلی جہازوں کو نشانہ بنا رہے ہیں۔

دریں اثنا واشنگٹن نے 18 دسمبر 2023 کو بین الاقوامی میری ٹائم نیویگیشن کی حفاظت کو نشانہ بنانے والے کسی بھی حملے کا مقابلہ کرنے کے مقصد کے ساتھ "خوشحالی کے محافظ" کے نام سے ایک کثیر القومی بحری فوجی اتحاد کے قیام کا اعلان کیا۔

بارہ جنوری سے اس اتحاد نے صنعا، حدیدہ، تعز، حجہ اور صعدہ میں حوثیوں کے فوجی ٹھکانوں پر کئی حملے کیے ہیں، جس میں برطانیہ کے ساتھ ساتھ دیگر ممالک نے بھی حصہ لیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں