مصر کے ساتھ بحران شدت اختیار کر رہا ہے، اسرائیلی حکام نے خبردار کردیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اسرائیل اور مصر کے درمیان گزشتہ چند دنوں کے دوران جنوبی غزہ کی پٹی کےشہررفح کے مشرق میں فوجی کارروائی کے پس منظر میں کشیدگی میں اضافہ ہوا ہے اور اسرائیلی حکام بھی اس تنائو کوتشویش کی نگاہ سے دیکھ رہے ہیں۔

اسرائیلی حکام نے متنبہ کیا ہے کہ مصر غزہ کی پٹی کو پرسکون کرنے اور قیدیوں کی رہائی کے معاہدے میں ثالثی کی کوششوں سے دستبردار ہو سکتا ہے کیونکہ رفح کراسنگ کے فلسطینی حصے پر اسرائیل کے کنٹرول کے بعد دونوں ممالک کے درمیان "بحران" مزید بڑھتا جا رہا ہے۔

تعاون کی سطح میں کمی

اسرائیلی اخبار "ہارٹز" کی بدھ کو رپورٹ کے مطابق حکام نے دونوں ممالک کے درمیان دفاع اور انٹیلی جنس کے شعبوں میں تعاون کی سطح کو کم کرنے کے امکان پر بھی اپنی تشویش کا اظہار کیا کیونکہ جب تک بحران حل نہیں ہوجاتا اس وقت تک مصراسرائیل کے ساتھ سفارتی تعلقات محدود کردے گا۔

رفح کے بے گھر افراد

اسرائیلی حکام نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ قاہرہ اور تل ابیب کے درمیان یہ بحران غزہ میں لڑائی کے جاری رہنے اور اسرائیل اور حماس کے درمیان کسی معاہدے تک پہنچنے کے لیے ہونے والے مذاکرات کے خاتمے سے مزید سنگین ہو جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں