ایران میں صدارتی الیکشن 28 جون کو کرانے کی تجویز

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

ایرانی حکام کی جانب سے ایرانی صدر ابراہیم رئیسی کے قتل کی تصدیق کے ساتھ ہی ایران میں الیکشن ہیڈ کوارٹرز کے ترجمان محسن اسلامی نے اعلان کیا کہ آئندہ 28 جون کو صدارتی الیکشن کے انعقاد کی تاریخ کے طور پر تجویز کیا گیا ہے۔

19 مئی کو ہیلی کاپٹر حادثہ میں جاں بحق ہونے والے ایرانی صدر ابراہیم رئیسی
19 مئی کو ہیلی کاپٹر حادثہ میں جاں بحق ہونے والے ایرانی صدر ابراہیم رئیسی
Advertisement

انہوں نے مزید کہا کہ اس تجویز کی ایک کاپی گارڈین کونسل کو بھیج دی گئی ہے۔ گارڈین کونسل کی جانب سے تجویز کی منظوری کے ساتھ ہی ملک کے انتخابی ہیڈکوارٹر کے ذریعے اس تاریخ کو الیکشن کا اعلان کردیا جائے گا۔

ایرانی آئین کیا کہتا ہے؟

ایرانی آئین کا آرٹیکل 131 ملک میں صدارتی عہدہ خالی ہونے کے نتیجے میں پیدا ہونے والی کسی بھی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے حوالے سے رہنمائی کرتا ہے۔ اس آرٹیکل میں یہ شرط رکھی گئی ہے کہ جمہوریہ کے صدر کی موت، اس کی برطرفی، اس کے مستعفی ہونے، دو ماہ تک غیر حاضر یا بیمار رہنے، صدارت کی مدت ختم ہونے پر رکاوٹوں یا دیگر مشکلات کے باعث نیا الیکشن نہ ہونے کی صورت میں نائب صدر سپریم لیڈر کی رضامندی سے صدر کا عہدہ سنبھال لے گا۔

ایران کے موجودہ پہلے نائب صدر محمد مخبر ہیں جنہیں رئیسی نے 2021 میں صدارت سنبھالنے کے بعد سے اس عہدے پر تعینات کیا تھا۔ آرٹیکل 131 اس بات کی بھی تصدیق کرتا ہے کہ اسلامی شوریٰ کونسل کے صدر، جوڈیشل اتھارٹی کے سربراہ اور جمہوریہ کے پہلے نائب صدر پر مشتمل ایک باڈی کو جمہوریہ کے نئے صدر کے انتخاب کے لیے ضروری انتظامات کرنا ہوں گے۔ یہ الیکشن 50 دن کی مدت میں منعقد کئے جائیں گے۔

اتوار 19 مئی کو ایرانی صدر ابراہیم رئیسی آذربائیجان میں آذربائیجان کے صدر الہام علی یوف کے ساتھ تیسرے ڈیم کے افتتاح کے بعد واپس آرہے تھے۔ ان کا ہیلی کاپٹر ملک کے شمال مغرب میں مشرقی آذربائیجان صوبے کے ایک ناہموار علاقے میں 2500 میٹر کی بلندی پر اڑتے ہوئے حادثہ کا شکار ہوگیا۔ ہلال احمر نے بتایا کہ ہیلی کاپٹر کے گرنے سے قبل ہی اس میں موجود تمام افراد جاں بحق ہوگئے تھے۔

بہت سے ایرانی مبصرین اور تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ اس حادثے کے پیچھے موسم کی خراب صورتحال اور گھنی دھند کے ساتھ ناہموار جگہ اور اونچے پہاڑ ہیں۔ دیگر کا خیال تھا کہ اس کی وجہ تکنیکی خرابی یا پرانے بیل 412 ہیلی کاپٹر کی خراب دیکھ بھال کے باعث پیدا ہونے والی خرابی بھی ہوسکتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں