مریض کے پیٹ سے 20 کیلیں اور دھاتی تاریں برآمد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

الجزائر کے ڈاکٹروں نے ایک مریض کے پیٹ سے 20 کیلیں اور دھاتی تاروں کی بڑی تعداد نکالی ہے۔مریض نے نفسیاتی امراض میں مبتلا ہونے کی وجہ سے مرحلہ وار اور غلطی سے ان کیلوں اور تاروں کو نگل لیا۔ تاہم حیرت ہے کہ وہ اتنی کیلیں کھانےکے باوجود زندہ بچ گیا۔

یہ واقعہ اس ہفتے مشرقی الجزائر کی ریاست سکیکدا میں پیش آیا، جہاں مقامی ہسپتال کے شعبہ سرجیکل میں کام کرنے والی میڈیکل ٹیم ایک نادر اور منفرد سرجیکل آپریشن کرنے میں کامیاب رہی، جس کے نتیجے میں مریض کے پیٹ سے پیچ اور دھاتی تاریں نکال دی گئیں۔

ہسپتال کےمنتظم عبدالرزاق بوحارہ کے مطابق سکیکدا میں پیچیدہ سرجیکل آپریشن میں جنرل سرجری کے ماہر پریکٹیشنر ڈاکٹر دعاس عمیور حسین کے ساتھ جراحی میں 6 گھنٹے سے زیادہ کا وقت لگا۔ ہسپتال کے شعبہ سرجیکل کے طبی اور پیرا میڈیکل سٹاف نے مل کر یہ آپریشن انجام دیا۔ انہوں نے بتایا کہ مریض کے پیٹ سے نکالی گئی کیلوں کی تعداد بیس ہے جب کہ بڑی تعداد تاریں بھی نکالی گئی ہیں۔

طبی ٹیم نے مریض کے پیٹ کے اندر سے پائے جانے والے دھاتی تاروں اور کیلوں کی تصاویر شائع کیں تو بہت سے لوگ حیران رہ گئے کہ وہ اپنے پیٹ کے اندر اتنی بڑی تعداد میں لوہے کی اشیاء کو کیسے برداشت کر سکتا ہے۔

مقامی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق نفسیاتی عارضے میں مبتلا شخص بڑی مقدار میں کیلیں اور دھاتی تاریں کھا لیں جو اس کے پیٹ میں بند ہو گئیں جس سے اسے شدید درد ہونے لگا۔ اس کے باعث وہ بے ہوش ہو گیا۔ ہسپتال میں معائنے کے بعد اس کے پیٹ کے فوری آپریشن کا فیصلہ کیا گیا تھا۔ کامیاب آپریشن کے بعد مریض کی حالت اب بہتر بتائی جاتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں