پاکستان کےساتھ تعلقات ایران کےلیے بہت اہم ہیں:سپریم لیڈرکی پاکستانی وزیراعظم سے گفتگو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

وزیراعظم پاکستان میاں محمد شہباز شریف نے ہیلی کاپٹر حادثے میں جاں بحق ہونے والے ایرانی صدر ابراہیم رئیسی کے جنازے میں شرکت کے موقعے پر ایرانی سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ ای سے بھی ملاقات کی۔

شہباز شریف نے المناک حادثے اور صدر ابراہیم رئیسی ، وزیرخارجہ امیرحسین عبداللہیان سمیت دیگر ایرانی عہدیداروں کی وفات پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا۔ انہوں نے ایرانی حکومت، عوام اور سوگوار خاندانوں سے ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ پاکستان مشکل کی اس گھڑی میں اپنے ایرانی بھائیوں کے ساتھ ہے۔

ایران کی فارس نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق وزیراعظم پاکستان شہباز شریف سے ملاقات کے موقعے پرخامنہ ای نے کہا کہ ایران اسلامی جمہوریہ پاکستان کے بارے میں مکمل طور پر برادرانہ نظریہ رکھتا ہے، لیکن حالیہ برسوں میں دونوں ممالک کے درمیان تعلقات میں اتار چڑھاؤ آئے ہیں۔ ہم سمجھتے ہیں کہ حکومت پاکستان کے ساتھ ان تعلقات کی تجدید کے نئے امکانات موجود ہیں۔

انہوں نے اپنی بات جاری رکھتے ہوئے کہا کہ جناب رئیسی کا حالیہ دورہ پاکستان دونوں ممالک کے تعلقات میں ایک اہم موڑ ثابت ہو سکتا ہے اور عبوری صدر ڈاکٹر مخبر دو طرفہ تعاون اور نئے معاہدوں کی راہ پر گامزن ہوں گے۔

انہوں نے مزید کہا: کہ برادر ممالک کے درمیان دوستانہ تعلقات ہمیشہ آسان نہیں ہوتے ہیں اور رکاوٹوں کو دور کیا جانا چاہیے۔ تعاون کی پیشرفت کو سنجیدگی اور عملی طریقے سے آگے بڑھانا چاہیے۔

اس ملاقات میں شہباز شریف نے سابق صدر ابراہیم رئیسی کے دورہ پاکستان کو بھی انتہائی مفید قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ مرحوم صدر رئیسی کا حالیہ دورہ پاکستان دونوں ممالک کے درمیان مستقبل کے تعلقات کے نئے روڈ میپ کی بنیاد بن سکتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں