مصر رفح راہداری کے راستے غزہ کے لیے امداد کی ترسیل تیز کرے: امریکی ہدایت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

امریکہ نے اسرائیل کے رفح پر رواں ماہ کے شروع سے جاری زمینی حملے کے دوران رفح راہداری کا کںٹرول اسرائیلی فوج کے اپنے ہاتھ میں لے لینے کے باوجود مصر کو ہدایت کی ہے کہ وہ غزہ میں امدادی سامان کی ترسیل کو تیز کرے۔

اسرائیل نے جنگ کا آٹھواں مہینہ شروع ہوتے ہی رفح راہداری سے معمول کی امداد کی غزہ منتقلی کو روکتے ہوئے اس کا آپریشنل کنٹرول اپنے ہاتھ میں لے لیا تھا۔

اس کے باوجود کہ اس پر مصر ، فلسطینیوں اور اقوام متحدہ کے اداروں کو اعتراض پیدا ہوا کہ اس طرح امدادی سامان کی ترسیل متاثر ہو گی۔ مگر اسرائیل نے اس کا کنٹرول اپنے ہاتھ میں ہی رکھا ہے۔ البتہ اسرائیل مصر کو یہ اصرار سے کہہ رہا ہے کہ مصر زیادہ امداد بھیجے۔

اب یہی اسرائیلی مطالبہ امریکی وزیر خارجہ نے بھی مصر سے کیا ہے کہ وہ رفح راہداری سے سامان کی ترسیل تیز کرے۔ دلچسپ بات ہے کہ امریکہ نے رفح راہداری کے اسرائیلی فوج کے کنٹرول میں لینے پر کوئی اعتراض نہیں کیا ہے کہ اس سے انسانی بنیادوں پر جاری امدادی عمل متاثر ہوگا۔

اس سے قبل امریکہ نے غزہ سے جڑی اپنی عارضی اور نئی بندرگاہ کی ہنگامی بنیادوں پر تعمیر بھی بظاہر اسی وجہ سے کی ہے کہ اسرائیل نے امدادی سامان کی ترسیل کو فوجی قوت سے روک دیا تھا۔ اس کے ایک کمتر متبادل کے طور پر امریکہ نے غزہ کے ساتھ بندرگاہ بنا کر اس کا آپریشنل انچارج امریکی فوج کی سینٹرل کمانڈ کو بنا دیا۔ بحری راستے کی راہداری امریکی فوج کی نگرانی میں ہے اور رفح کی زمینی راہداری اسرائیلی فوج کے کنٹرول میں آ گئی ہے۔

ادھر رفح میں اسرائیلی جنگ جاری ہونے کی وجہ سے امدادی سامان کی ترسیل ایک چیلنج کی شکل دھار چکی ہے۔ بلنکن نے کہا ہمیں مسئلے کا حل نکالنا چاہیے جس کے نتیجے میں رفح کے راستے سے محفوظ انداز میں امداد کی ترسیل ہو سکے۔

ان کا کہنا تھا 'میں مصر سے زور دے کر کہتا ہوں کہ وہ رفح راہداری کے راستے امداد کی منتقلی تیز کرنے کے لیے ہر ممکن کوشش کرے۔ ہور وہ کوشش جو مصر اپنی طرف سے کر سکتا ہے۔ تاکہ غزہ کے لیے امدادی سامان کی ترسیل ممکن ہو سکے۔'

بتایا گیا ہے کہ ماہ مئی کے شروع میں رفح پر اسرائیل کے زمینی حملے کے بعد سے اب تک 900000 فلسطینی دوبارہ رفح سے نقل مکانی پر اسرائیل فوج کے ہاتھوں مجبور ہو چکے ہیں۔ نقل مکانی کرنے والوں کے اس نئے سیلاب کے سبب مصر نے اسرائیل کے سامنے اپنے تحفظات ظاہر کیے ہیں۔

مصری وزیر خارجہ نے پیر کے روز اپنے ایک بیان میں کہا تھا کہ اسرائیلی فوج کی موجودگی سے امدادی سامان لانے والے ٹرکوں کے ڈرائیور خوف محسوس کرتے ہیں۔ اسرائیل وزیر برائے سٹریٹجک امور کے وزیر نے الٹا مصر پر الزام لگایا ہے کہ امدادی سامان کا بہاؤ مصر کی وجہ سے رکا ہے۔

خیال رہے اسرائیلی وزیر کا کہنا ہے اس وقت اسرائیلی فوج کے رفح راہداری پر کنٹرول سے مصر کی جانب 2000 ٹرک رکے ہوئے ہیں۔ کہ مصر اپنی سرحد کے نزدیک اسرائیلی فوج کی موجودگی اپنے لیے سیاسی مسئلہ سمجھتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں