امریکی سی آئی اے اور موساد کے سربراہان کی پیرس میں ملاقات ہو گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی سی آئی اے کے سربراہ ولیم برنز جن کے بارے میں جمعرات کے روز یہ اطلاع سامنے آئی تھی کہ وہ اسرائیلی موساد سربراہ سے ملاقات کے لیے جا رہے ہیں۔ جمعہ کے روز ان کی اس سلسلے میں پیرس میں ملاقات شیڈول ہونے کی تصدیق ہو گئی ہے۔

ان کے اس دورے اور اسرائیلی موساد چیف کے ساتھ پیرس میں ملاقات کا اہم ترین موضوع اسرائیلی یرغمالیوں کو بازیاب کرنا ہے ۔ جو پچھلے تقریبا ساڑھے سات ماہ سے غزہ میں قید ہیں۔ اور اسرائیلی فوج اتنی طویل جنگ کے باوجود ان میں سے ایک کو بھی رہا نہیں کرا سکی ہے۔

اطلاعات کے مطابق پیرس ملاقات اسرائیلی نمائندوں کے ساتھ ان مذاکرات کو دوبارہ سے شروع کرنے کے حوالے سے بھی اہم ہو گی، تاہم یہ حتمی نہیں کہ اس بارے میں اسی ایک آپشن پر انحصار کیا جائے۔

اس معاملے سے جڑے یورپی ذرائع کا کہنا ہے کہ سی آئی اے چیف امکانی طور پر جمعہ کے روز یا ہفتے کے روز پیرس پہنچیں گے۔ اس سلسلے میں اسرائیل نے انہیں مثبت اشارہ دیا ہے کہ اسرائیلی حکام بات چیت کے لیے دستیاب ہوں گے۔ نیز نئے سرے سے مذاکرات شروع کرنے پر بھی تیار ہوں گے۔

اس سے قبل اسی ماہ کے شروع میں مذاکرات کا سلسلہ منقطع ہو گیا تھا اور اسرائیل نے سات مئی کو رفح پر اپنے ٹینک اور زمینی فوج بھیج دی تھی۔ حماس کی طرف سے مذاکرات جاری رکھنے کی آمادگی کے باوجود اسرائیل نے کسی نتیجے پر پہنچنے سے انکار کر دیا تھا۔

ایک نیوز ویب سائٹ کے مطابق سی آئی اے چیف قطر کے وزیر اعظم محمد بن عبدالرحمان الثانی سے بھی ملاقات کا ارادہ رکھتے ہیں۔

اسی ویب سائٹ نے خبر دی ہے کہ اسرائیل نے مذاکرات کے نئے سرے سے اجرا کے لئے نئی تجاویز بھی مرتب کی ہیں،تاہم یہ کہنا پھر بھی قبل از وقت ہو گا کہ مذاکرات کامیاب ہوں گے یا اسرائیل کا رفح پر حملہ تیز ہوگا ۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں