مصری شوہر کی شامی بیوی کے پاؤں چومنے کی ویڈیو وائرل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

مصرمیں ایک شوہرکی جانب سے ازراہ محبت واحترام اپنی نئی نویلی دلہن کے پاؤں چومنے کی ویڈیو سامنے آنے کے بعد سوشل میڈیا پر اس پر ملا جلا رد عمل آرہا ہے جب کہ ویڈیو مسلسل وائرل ہو رہی ہے۔

تاہم اس واقعے کے پیچھے پیار اور احترام کا رشتہ ہےجس میں دونوں میاں بیوی بندھے ہوئے ہیں۔

ایک ناقابل فراموش واقعہ

معلوم ہوا کہ 40 سالہ شامی دلہن سوزان رسلان نے اپنے دولہے سے ملاقات کی اور انسانی ہمدردی اور اخلاقی موقف کے نتیجے میں اس سے محبت کا اظہار کیا۔

اس نے العربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ وہ ایک بحران اور مشکل دور سے گذری۔ر اچانک اسے اپنے دولہا کو مددگار اور معاون پایا۔ اس نے میری آسائش وآرام کی خاطر گھرمیرے حوالے کردیا۔

اس نے کہا کہ وہ اپنے دولہے میں ایمانداری، بہادری اور سلامتی کو پسند کرتی ہے۔

اس نے وہ صورت حال بیان کی جو اس کے لیے اس کی سخاوت کی عکاسی کرتی تھی۔ جب وہ ایک بڑے بحران سے گذر رہی تھی اور اس نے اس کے شانہ بشانہ کھڑے ہو کر اس کی مدد کی۔ اس سے کہا: "تمہارے بھائی کا گھر تمہارے اور تمہارے بچوں کے لیے کھلا ہے اور میں وہاں سے چلاجاتا ہوں‘‘۔

نوبیاہتا جوڑے نے اپنی شادی کی ایک ویڈیو وائرل ہونے کی وجہ سےسوشل میڈیا پر سنسنی پھیل گئی جس میں شوہر کو اپنی بیوی کے پاؤں چومتے دیکھا جا سکا ہے۔

جب 50 سالہ مصری دولہے محمود عبدالنبی سے پوچھا گیا تو اس نے العربیہ ڈاٹ نیٹ کو بتایا کہ وہ ایک ایسی عورت کی تلاش میں ہیں جو اس کی قدر کو سمجھتی ہو۔ سوزان اس کے اس کے لیے مثالی بیوی ثابت ہوئی۔

جب شادی کے لیے بات مکمل ہوگئی تو محمود نے سوزان سے کہا کہ وہ اس کے لیے شادی ی ایسی تقریب منعقد کرے گا جس پر سب دھنگ رہ جائیں گے۔

قابل ذکر سلوک

قابل ذکر ہے کہ یہ ویڈیو سوشل نیٹ ورکنگ سائٹس پر بڑے پیمانے پر پھیلنے کے بعد مصری حلقوں کی توجہ کا مرکز بنی ہوئی ہے۔البتہ اس پر ملا جلا رد عمل سامنے آیا ہے۔ بعض صارفین نے اس پر طنز اور تنقید کی ہے جب کہ کچھ اس حمایت کرتے نظرآتے ہیں۔

ویڈیو گرافر کریم مجید نے کہا کہ انھیں دولہا کا رویہ معاشرے کے لیے قابل ذکر اور عجیب لگا۔ اس لیے انھوں نے اس لمحے کی ویڈیو بنا کر سوشل میڈیا پر پوسٹ کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں